نیب آرڈیننس کو کسی صورت تسلیم نہیں کرینگے،سینیٹر عثمان کاکڑ 

 نیب آرڈیننس کو کسی صورت تسلیم نہیں کرینگے،سینیٹر عثمان کاکڑ 

  



کوئٹہ (آن لائن)پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے صوبائی صدر وسینیٹر عثمان کاکڑ نے کہا ہے کہ موجودہ نیب آرڈیننس کو کسی صورت تسلیم نہیں کرینگے کرپشن کیخلاف کارروائیاں کرنے والے اب اپنی کرپشن پر نیب آرڈیننس جاری کر کے عوام کو بے وقوف بنا یا ہے پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور دیگر (بقیہ نمبر38صفحہ12پر)

اپوزیشن جماعتیں موجودہ نیب آرڈیننس کو یکسر مسترد کرتی ہے آئین سے متصادم قانون سازی نہیں ہو سکتی لیکن سلیکٹڈ وزیراعظم اداروں، جمہوریت اور آئین کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہے ان خیالات کااظہارانہوں نے نجی ٹی وی سے با ت چیت کرتے ہوئے کیا عثمان کاکڑنے کہا کہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی موجودہ حکومت کے آئین سے متصادم کسی بھی فیصلے کو سپورٹ نہیں کرینگے پارلیمنٹ اور پارلیمنٹ کے باہر شدید احتجاج کیا جائے گا اپوزیشن جماعتیں نیب آرڈیننس پر یک زبان ہوکر موجودہ حکمرانوں کیخلاف سڑکوں پر نکل آجائیں کیونکہ یہ نیب آرڈیننس صرف اور صرف اپوزیشن جماعتوں کو انتقام کا نشانہ بنا نے کیلئے بنا یا گیا ہے نیب آرڈیننس میں عدلیہ سمیت دیگر اداروں کو ریلیف دیا گیا ہے ہم سمجھتے ہیں کہ نیب کو ہم شروع سے ہی تسلیم نہیں کرتے کیونکہ یہ ایک آمر کے دور میں بنا یاگیا تھا اور ایک آمر نے سیاسی وفاداری خریدنے کیلئے نیب بنا کر ان لوگوں کویرغمال بنا یا جنہوں نے کرپشن کیا تھا انہوں نے کہا کہ ملک بحرانوں کا شکار ہے فوری طور پر نئے انتخابات کرائے جائیں پارلیمنٹ کو سازش کے تحت کمزور بنا یا جارہا ہے جب تمام فیصلے آرڈیننس کے ذریعے کئے جاتے ہیں تو ہم یہ سمجھتے ہیں کہ موجودہ سلیکٹڈ حکمران اپنی ناکامیوں اور دوستوں کو بچانے کیلئے آرڈیننس کا سہارا لے رہے ہیں سلیکٹڈ وزیر اعظم نے خود اور دوستوں کو بچانے کیلئے نیب آرڈیننس کو نافذ العمل کر کے ان کا سہارا لیا ہے اب رہبر کمیٹی میں شامل تمام جماعتوں نے اس فیصلے کیخلاف یک زبان ہوگئے پارلیمنٹ کے اندر وباہر شدید احتجاج کیا جائے گا۔

عثمان کاکڑ 

مزید : ملتان صفحہ آخر