90 کی دہائی کے کپڑے ہزاروں روپے کے فروخت ہونے لگے، اگر آپ کے پاس بھی پرانے کپڑے پڑے ہیں تو مالا مال ہوسکتے ہیں

90 کی دہائی کے کپڑے ہزاروں روپے کے فروخت ہونے لگے، اگر آپ کے پاس بھی پرانے کپڑے ...
90 کی دہائی کے کپڑے ہزاروں روپے کے فروخت ہونے لگے، اگر آپ کے پاس بھی پرانے کپڑے پڑے ہیں تو مالا مال ہوسکتے ہیں

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اگر آپ کے پاس 90ءکی دہائی کے پرانے کپڑے پڑے ہیں تو آپ بیٹھے بٹھائے مالا مال ہو سکتے ہیں کیونکہ نوے کی دہائی کا فیشن ایک بار پھر مانگ میں ہے اور اس دور کے پرانے ملبوسات ہزاروں روپوں میں فروخت ہونے شروع ہو گئے ہیں۔ دی مرر کے مطابق ای بے اور دیگر آن لائن شاپنگ پلیٹ فارمز پر نوے کی دہائی کے پرانے ملبوسات کی مانگ بہت بڑھ گئی ہے اور یہ حیران کن قیمتوں میں فروخت ہو رہے ہیں۔ اب تک ای بے پر سینکڑوں پرانے لباس فروخت ہو چکے ہیں اور یہ سب کے سب 100پاﺅنڈ (تقریباً 20ہزار روپے) سے زائد قیمت میں بکے۔

رپورٹ کے مطابق ان پرانے ملبوسات کی قیمت اس لیے اوپر جا رہی ہے کہ 90ءکی دہائی کا فیشن ایک بار پھر واپس آ رہا ہے اور زیادہ سے زیادہ لوگ اس فیشن کے ملبوسات خرید رہے ہیں۔ ویب سائٹ ’منی سیونگ ایکسپرٹ ڈاٹ کام‘ کی تحقیق کے مطابق کئی ملبوسات تو 600پاﺅنڈ سے زائد میں فروخت ہو چکے ہیں جیسا کہ ای بے پر1990ءکی دہائی کی ایک میوزک ٹی شرٹ 600پاﺅنڈ (تقریباً 1لاکھ 21ہزار روپے)میں فروخت ہوئی ہے۔ ویب سائٹ کے مطابق صرف ملبوسات ہی نہیں بلکہ اس دور کے جوتے، جیکٹس، پرس اور دیگر چیزیں بھی ہاتھوں ہاتھ مہنگے داموں فروخت ہو رہی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...