اب کسان اپنا کھیت اپنے جسم پر پہن کر بھی پھر سکتے ہیں، سب سے حیرت انگیز ایجاد آگئی

اب کسان اپنا کھیت اپنے جسم پر پہن کر بھی پھر سکتے ہیں، سب سے حیرت انگیز ایجاد ...
اب کسان اپنا کھیت اپنے جسم پر پہن کر بھی پھر سکتے ہیں، سب سے حیرت انگیز ایجاد آگئی

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) جدید ٹیکنالوجی اب تک کیا کچھ معجزے نہیں دکھا چکی، مگر اب اس کے باعث ایک ایسی ایجاد کر ڈالی گئی ہے کہ سن کر آپ کی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی۔ ویب سائٹ سی بی سی کینیڈا کے مطابق ماہرین نے ایک ایسا کھیت ایجاد کر لیا ہے جس میں سبزیاں اگتی ہیں اور اس کھیت کو لباس کی طرح پہنا جاتا ہے۔ یہ حیران کن ایجاد ’امریکن اکیڈمی اِن روم‘ کے ماہرین نے کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ دنیا کا پہلا ویئرایبل فارم ہے جس میں اگنے والی جڑی بوٹیاں اور سبزیاں اس شخص کے پیشاب سے سینچی جاتی ہیں جس نے اسے پہن رکھا ہوتا ہے۔ یہ ایجاد کرنے والی ٹیم کی سربراہ ایروسیاک گیبریلیئن کا کہنا تھا کہ ”مجھے اس ایجاد کا آئیڈیا اس خیال سے آیا کہ میرا جسم میرے نومولود بچے کو کیا دے سکتا ہے۔ اب تک ہم ان گاﺅن نما ویئرایبل فارمز پر 22مختلف فصلیں اگا چکے ہیں۔ “

رپورٹ کے مطابق کئی لوگوں نے اٹلی کے دارالحکومت روم میں واقع اس اکیڈمی کا دورہ بھی کیا ہے اور اس ویئرایبل فارم میں اگنے والی چیزیں کھانے کا تجربہ حاصل کیا ہے۔ یہ لباس نما ویئر ایبل فارم ان دنوں چین کے دارالحکومت بیجنگ میں ہونے والی ایک نمائش میں بھی رکھے گئے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /کسان پاکستان


loading...