نیب ترمیمی آرڈیننس 2019کے نافذ العمل ہونے کے بعد چیئر مین نیب کا پہلا بیان سامنے آگیا

نیب ترمیمی آرڈیننس 2019کے نافذ العمل ہونے کے بعد چیئر مین نیب کا پہلا بیان ...
نیب ترمیمی آرڈیننس 2019کے نافذ العمل ہونے کے بعد چیئر مین نیب کا پہلا بیان سامنے آگیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ کوئی چاہے جتنا بھی طاقتور ہو، جو وہ کرے گا وہ بھرے گا،میگا کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانا نیب کی اولین ترجیح ہے۔نیب لاہور ہیڈکوارٹرز میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے

ان کا کہنا تھا کہ نیب کا تعلق کسی گروہ یا سیاسی جماعت سے نہیں بلکہ پاکستان سے ہے۔ نیب کی کسی سے ذاتی رنجش نہیں ہے۔ نیب کو کسی کیخلاف غلط کیس بنانے کی ضرورت نہیں ہے قانون کے راستے میں کوئی مصلحت رکاوٹ نہیں بنے گی۔ کرپشن کرنے والوں کو ہر صورت جواب دہ ہونا پڑے گا۔جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ دو سالوں میں ثابت کیا کہ صرف میرٹ کی پاسداری کی ہے۔ یہ کہہ دینا کہ ضمانتیں ہورہی ہیں، یہ تو عدالتوں کا اختیار ہے۔ عدالتیں جس طرح چاہیں اپنے اختیارات کو استعمال کریں۔ ریفرنسز عدالتوں میں زیرغور ہیں۔ ضمانتیں عارضی چھوٹ ہے۔

مزید : قومی