نرسنگ ڈائریکٹر ارشاد حسین کیخلاف ایف آئی آر کا اندراج قابل افسوس

 نرسنگ ڈائریکٹر ارشاد حسین کیخلاف ایف آئی آر کا اندراج قابل افسوس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)نرسنگ کا پیشہ انتہائی مقدس اور معزز ہے‘ نرسز ہسپتالوں میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہیں پولیس کی جانب سے نرسنگ ڈائریکٹر ارشاد حسین کیخلاف ایف آئی آر کا اندراج قابل افسوس ہے ایف آئی آر کو فی الفور ختم کیا جائے بی او جی اور سیاسی قیادت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ نام نہاد مافیا کیخلاف کاروائی عمل میں لائی جائے اگر ہمارے مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو بروز ہفتہ خیبرپختونخواہ کی نرسز ڈیرہ پہنچیں گی اور مافیا کیخلاف احتجاج کرینگیں ان خیالات کا اظہار تسلیم حیات صدر ینگ نرسنگ ایسوسی ایشن‘زینب فاطمہ چارج نرس‘ تہمینہ عنبرین مارننگ سپروائزر‘ باسط میل نرس‘ شفقت میل نرس‘ انیسہ خان انچارج نرس‘ الفت اور نبیلہ نے ڈیرہ پریس کلب (ر)میں پریس کانفرنس کے دوران کیا‘ ان کا کہنا تھا کہ ڈیرہ اسماعیل خان میں 2015میں باقی ایم ٹی آئیز ہسپتالوں کی طرح موجودہ حکومت نے ہیلتھ کیئر سسٹم میں ریفامز کرکے ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ کیا‘ جس میں نرسنگ شعبہ کو بین الاقومی معیار کے مطابق خود مختار کیا‘ موجودہ بی او جی نے نرسنگ ڈائریکٹر کی پوسٹ مشتہر کرکے بہترین فیصلہ کیا‘ انہوں نے کہا کہ نرسنگ ڈائریکٹر ارشاد حسین کو بدنام اور دلبرداشتہ کرنے کیلئے ہراسمنٹ کو بطور ہتھیار استعمال کیا گیا ہے تاکہ بورڈ ان کیخلاف کاروائی کے یا وہ خود استعفیٰ دیکر چلے جائیں۔ارشاد حسین ایک معزز پروفیشنل آفیسر ہیں‘آج تک ہم نے ان میں ہراسمنٹ کے حوالے سے کوئی بات نہیں دیکھی۔