کسی کی قیادت میں بھی کھیلنے کیلئے تیارہوں،سختی کاقائل نہیں،اظہرعلی

کسی کی قیادت میں بھی کھیلنے کیلئے تیارہوں،سختی کاقائل نہیں،اظہرعلی

نیپیئر(آئی این پی)پاکستان ون ڈے ٹیم کے کپتاناظہرعلی نے کہا ہے کہ ون ڈے ٹیم میں کسی دوسرے کپتان کی قیادت میں کھیلنے پر کوئی اعتراض نہیں ہوگا، میں پی سی بی کے ہر فیصلے کا احترام کرنے کا پابند ہوں،کرکٹ نے میرے اعصاب مضبوط کردیئے ہیں،مصباح الحق نے سمجھایا تھا کہ پاکستانی ٹیم کی قیادت کے دوران میں اپنے غصے پر قابو رکھنا،بہت سے لوگ کھلاڑیوں پر سختی کیلئے ورغلائیں گے،میں کھلاڑیوں کو ہدایت ضرور کرتا ہوں لیکن سختی کا قائل نہیں،ہر کھلاڑی کو پتہ ہوتا ہے کہ وہ کھیلے گا تو ٹیم میں رہے گا،عوام کو بھی سمجھنا ہوگا کہ وہ کسی بھی ایک کھلاڑی کو بہت زیادہ سر نہ چڑھائیں نہ ہی کسی پر زیادہ تنقید کر یں۔اپنے ایک انٹرویو میں اظہر علی کا کہنا تھا کہ میں خود ہی استعفی دے چکا ہوں جوشہریار صاحب نے منظور نہیں کیاتھا۔ون ڈے کپتان کا کہناتھا کہ مجھے کسی کی بھی کپتانی میں کھیلنے پر کوئی اعتراض نہیں۔ ہاںیہ ضرور ہے کہ اگر کوئی ایسا شخص ٹیم کی قیادت کرتا ہے جس نے ملک کا نام خراب کیا ہے تو پھر ہوسکتا ہے کہ میں ٹیم کا حصہ نہ رہوں لیکن میں بورڈ کے ہر فیصلے کا احترام کرنے کا پابند ہوں۔

اْنہوں نے مزید کہاکہ جہاں تک بات ملک اور قوم کے وقار کی ہے تو پھر اظہر علی کسی سے پیچھے نہیں رہے گا۔کوئی مجھے باآسانی توڑ نہیں سکتا۔کرکٹ نے میرے اعصاب کافی مضبوط کردیئے ہیں اور مصباح بھائی نے بھی سمجھایا تھا کہ پاکستانی ٹیم کی قیادت کے دوران میں اپنے غصے پر قابو رکھوں۔بہت سے لوگ مجھے ورغلائیں گے کہ میں کھلاڑیوں سے سختی کروں تو وہ کارکردگی دکھائیں،میں کھلاڑیوں کو ہدایت ضرور کرتا ہوں لیکن سختی کا قائل نہیں ہوں۔ہر کھلاڑی کو پتہ ہوتا ہے کہ وہ کھیلے گا تو ٹیم میں رہے گا ورنہ اور بہت سے کھلاڑی منتظر بیٹھے ہیں۔ہماری عوام کو بھی سمجھنا ہوگا کہ وہ کسی بھی ایک کھلاڑی کو بہت زیادہ سر نہ چڑھائیں نہ ہی اس کی بہت زیادہ مذمت کریں۔ہماری ٹیم کا ہر کھلاڑی اچھی کارکردگی دکھانے کی کوشش کرتا ہے لیکن ہر بار ہی ہر کوئی کامیاب ہوجائے، یہ ضروری نہیں ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی