پرانی اور بوسیدہ واٹر سپلائی پائپ لائنو ں کو بھی تبدیل کیاجارہاہے،ڈ ی جی فشریز

پرانی اور بوسیدہ واٹر سپلائی پائپ لائنو ں کو بھی تبدیل کیاجارہاہے،ڈ ی جی ...

لاہور(اپنے خبر نگار سے) ڈائریکٹرجنرل ماہی پروری ڈاکٹر محمد ایوب نے کہاہے کہ صوبہ کے 6پرانے فش نرسری فارموں کی بحالی اور انہیں جدید خطوط پر تیار کرنے کے لیے نئے تعمیر کئے جانے والے تالابوں میں پانی کی ضرورت کو پورا کرنے کے لیے شمسی ٹربائنیں نصب کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔ پانی کے وسائل کو بچانے کے لیے پرانی اور بوسیدہ واٹر سپلائی پائپ لائنو ں کو بھی تبدیل کیاجارہاہے۔انہوں نے بات پرانے فش سیڈ نرسری فارموں کی بحالی بارے منعقد ہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جس میں ڈائریکٹر فشریز ڈاکٹر افتخار قریشی ، ڈائریکٹر فشریز و پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر سکندر، ڈپٹی ڈائریکٹر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ انصر محمود چھٹہ کے علاوہ دیگر افسران نے بھی شرکت کی۔

ڈی جی فشریز نے کہا کہ بجلی کی فراہمی میں تعطل کے باعث فش نرسری فارموں کو پانی کی سپلائی متاثر ہورہی تھی جس کے باعث شمسی ٹربائنیں نصب کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ڈاکٹر محمد ایوب نے کہا کہ خانیوال میں پیرووال ، سرگودھا میں شاہ پور ، اٹک میں فتح جنگ ، سیالکوٹ میں کوٹلی آرائیاں ، ٹوبہ ٹیک سنگھ میں پیر محل اور بہاولپور میں حاصل پورکے فش نرسری فارموں کی بحالی پر کام تیزی سے جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ ان پرانے فش فارموں کو ماڈرن طرز پر تیار کرنے پر تقریباً 11کروڑ روپے لاگت آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ ان نرسری فارموں کی تیاری سے صوبہ میں 22لاکھ پونگ مچھلی کی اضافی پیداوار حاصل ہوگی جس سے نا صرف مچھلی کی پیداوار میں 400سے 500میٹرک ٹن اضافہ ہوگا بلکہ ان علاقوں میں فش فارمنگ کو بھی فروغ ملے گا اور روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

مزید : کامرس