عطائی ہڈی جوڑوں کے اہم شاہراؤں پر ڈیرے ، بیماریوں میں اضافہ ؛ تجاوزات کی بھرمار انتظامیہ خاموش

عطائی ہڈی جوڑوں کے اہم شاہراؤں پر ڈیرے ، بیماریوں میں اضافہ ؛ تجاوزات کی ...

 لاہور(رپورٹ :ارشد محمود گھمن) ہڈی جوڑ نے کے نام نہاد ماہرین اور جراحوں نے شہر میں جگہ جگہ ڈیرے جما لئے ، جس کے باعث تجاوزات کی بھرمار ہوگئی ہے اسی وجہ سے پیدل چلنے والوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ ٹریفک بھی گھنٹوں جام رہنا معمول بن چکا ہے ،یہ انسانیت کے دشمن "عطائی "چند روپوں کی خاطرسادہ لوح لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے میں مصروف ہیں اور یہ مختلف مقامات پر سرشام ہی اپنی دکانیں سجا لیتے ہیں ،حکومت پنجاب کی لاپرواہی اور ہیلتھ کیئر کمیشن کی مبینہ ملی بھگت سے کھلی چھٹی ملنے پر یہ مافیا اہم شاہراہوں پر براجمان ہے جنہوں نے قدآور بینر اور دلکش تصویریں لگا کر معصوم شہریوں کو معذور کرنے کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت کے مصروف بازاروں میں انسانیت کے دشمن ’’عطائی‘‘ شہریوں کی زندگیوں سے کھیلنے میں مصروف ہیں۔ ۔روزنامہ ’’پاکستان‘‘ کی جانب سے شہر کے اہم مقامات پر کئے گئے سروے کے دوران انکشاف ہوا کہ پنجاب حکومت کے عطائیت کیخلاف کریک ڈاؤن کے باوجود یہ نڈر افراد کھلے عام شہریوں میں معذوری بانٹ رہے ہیں، شہر کے مرکز میں واقع مصروف ترین شاہراہ ٹیمپل روڈ جہاں رات گئے تک لوگوں کی آمد و رفت رہتی ہے وہاں تھانہ مزنگ کی عین ناک کے نیچے یہ غیر قانونی کاروبار عروج پر ہے۔ قابل ذکر امر یہ ہے کہ چند گز کے فاصلے پر واقع تھانہ مزنگ سمیت قانون نافذ کرنے والے ادارے اس غیر قانونی سرگرمی پر خاموش ہیں۔ وزیر اعلیٰ کی جانب سے نام نہاد ہڈی جوڑوں اور عطائیت کے خلاف اعلان جنگ کے باوجود اس مذموم کاروبار میں ملوث افراد بلا خوف و خطر اپنا کام جاری رکھے ہوئے ہیں۔ دوران سروے ہڈی جوڑ کے ’’ماہر‘‘ ان جراحوں کے ہاتھوں عمر بھر کیلئے معذور ہونیوالے افراد نے بھی اس تشویشناک صورتحال پرشدید غصے اور مایوسی کا اظہار کیا ہے۔شہریوں نے اس غیر قانونی کاروبارکی نشاندہی کرتے ہوئے حکومت پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے افراد کیخلاف کریک ڈاؤن تیز کیا جائے۔شہریوں کا مزید کہنا تھا کہ ان جاہل عطائیوں اور جراحوں کے جان لیوا طریقہ علاج سے عمر بھر کی معذوری، غیر معیاری کشتے سے گردے ناکارہ، جعلی دندان سازوں کے غلیظ اوزاروں سے ہیپا ٹائٹس اور ایڈز ، بلڈ پریشر، شوگر ، تشنج، گینگرین ، جگر کی بیماریاں اور غیر قانونی استقاط حمل سے بانجھ پن جیسے امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں۔ واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل بھی وزیر اعلیٰ کی ہدایت پرعطائیت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے حکومت پنجاب کے اشتراک سے صوبہ بھر میں اس مذموم کاروبار کے خلاف، اس لعنت کے خاتمے تک کریک ڈاؤن کا اعلان کیاجس پر صوبہ بھر سے عطائیت کے خاتمے کے لئے متعددعطائیوں کے خلاف کارروائی کر کے کلینکس سربمہر کئے گئے تھے لیکن اب پھریہ مافیا سرگرم ہوگیا ہے اور معصوم کی جانوں سے کھیل رہا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1