حکمت کی جعلی ڈگریاں دینے والے کالجوں کے خلافکریک ڈاؤن ،چیئرمین ڈرگ کورٹ نے رپورٹ مانگ لی

حکمت کی جعلی ڈگریاں دینے والے کالجوں کے خلافکریک ڈاؤن ،چیئرمین ڈرگ کورٹ نے ...

لاہور(جاوید اقبال) چیئرمین ڈرگ کورٹ نے جعلی حکماء اور نام نہاد ہومیو پیتھک ڈاکٹرز کو ڈگریاں جاری کرنے والے کالجز کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم دیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ ان کالجز کے خلاف کریک ڈاؤن کا حتمی فیصلہ کر لیا گیا ہے اس سلسلے میں ڈرگ کورٹ کے چیئرمین محمد جہانگیر چودھری نے محکمہ صحت ،تعلیم اور کونسل آف ہومیو پیتھک سے کالجز اور سکولوں کی تفصیلات طلب کر لی ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ حکماء اور ہومیو پیتھک کی ڈگریاں جاری کرنے والے ادارے چند ہزار روپے میں ڈگریاں فروخت کر رہے ہیں اور عطائی ڈاکٹروں کی طرز پر جعلی حکماء اور ہومیو پیتھک ڈاکٹرز پیدا کر رہے ہیں جو عوام کی زندگیوں سے کھیل رہے ہیں محکمہ صحت اور تعلیم بتائیں کہ ایسے اداروں کو کس طرح رجسٹر کیا گیا اور انہیں ڈگریاں ایوارڈ کرنے کااختیار دیا گیا۔اکثریت کے پاس پڑھانے کے لیے تجربہ کار فیکلٹی موجود نہیں اور نہ لیب ہے نہ ساز و سامان اس موقع پر کیس میں پیش ہونے والے خودکو حکیم ظاہر کرنے والے حکیم شفیق سے ڈرگ کورٹ کے جج جہانگیر چودھری نے دریافت کیا کہ آپ نے جس کالج سے ڈگری حاصل کی ہے اس کے پرنسپل اور 4اساتذہ کے نام بتاؤ مگر نام بھی نہ بتا سکے عدالت نے اس پر سخت ریمارکس دیئے تو حکیم نے انکشاف کیا کہ کورس کے دوران صرف 4مرتبہ کالج گئے 10ہزار میں ڈگری مل گئی جس پر چیئر مین ڈرگ کورٹ نے کہا کہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ قوم کی صحت سے کھیلنے کا کوئی موقع ضائع نہیں جانے دیتے ۔اس موقع پر چیئرمین نے کہا کہ اس کا سخت نوٹس لے لیا گیا ہے محکمہ صحت ،تعلیم اور کونسل بتائے کہ ایسے اداروں کو کون رجسٹر کرتا ہے اور کون ڈگریاں ایوارڈ کرنے کا حکم دیتا ہے ان اداروں کو بند کر دیں گے جس کے لیے سخت ایکشن لیا جائے گا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1