ورک چارج ملازمین ریگولرنہ کرنے پردوٹی ایم اوزکی تنخواہ روکنے کاحکم

ورک چارج ملازمین ریگولرنہ کرنے پردوٹی ایم اوزکی تنخواہ روکنے کاحکم

لاہور(نامہ نگار)ورک چارج ملازمین کوریگولرنہ کرنے پرٹی ایم اوداتا گنج بخش ٹاؤن اورٹی ایم اوسمن آبادٹاؤن کی تنخواہ روکنے کاحکم،لیبر کورٹ نے تنبیہ کی کہ اگرآئندہ تاریخ تک ملازمین کوریگولرنہ کیاگیا تودونوں ٹاؤنزکیٹی ایم اوز کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے جائیں گے۔ داتا گنج بخش ٹاؤن کے 52ملازمین نے لیبرکورٹ میں مستقل نہ کرنے پرکیس دائرکررکھاہے جس میں ملازمین کا موقف ہے کہ ان کے ساتھ امتیازی سلوک کیاجارہاہے اورافسران ذاتی پسند نا پسند کی وجہ سے ان کومستقل نہیں کر رہے۔

عدالت کے ملازمین کو ریگولر کرنے کے حکم کے باوجود داتا گنج بخش ٹاؤن انتظامیہ نے اصغر علی سمیت 52ملازمین کو ریگولر نہیں کیا۔ ملازمین کی جانب سے توہین عدالت کی درخواست پر ٹی ایم او سمن آباد ٹاؤن اقبال فرید کو عدالت نے متعدد بار طلب کیا مگر وہ عدالت میں پیش نہ ہوئے۔ اس پر عدالت نے ان کی تنخواہ روکنے کا حکم دیا ہے اور کہا ہے کہ اگر 9 فروری تک وہ عدالت پیش نہ ہوئے اور ملازمین کو ریگولر کرنے کا نوٹیفکیشن پیش نہ کیا تو ان کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے جائیں گے۔ اسی طرح سمن آباد ٹاؤن کے عبدالوحیداورامان علی سمیت 3 ملازمین 2011ء سے ریگولرہونے کے منتظرہیں،عدالت ان کو ریگولر کرنے کا حکم دے چکی ہے۔ ٹی ایم او سمن آباد ٹاؤن امتیاز احمد اعوان بھی عدالت طلبی پر پیش بھی نہیں ہوئے، جس پر عدالت نے ان کی تنخواہ روکنے کا حکم دیا ہے۔ عدالت نے اپنے حکم میں کہاہے کہ اگر 10فروری تک ملازمین کومستقل نہ کیا گیا توٹی ایم او کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے جائیں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4