کا ہنہ ،کم سن بچے کیساتھ نامعلوم افرادکی اجتماعی بااخلاقی

کا ہنہ ،کم سن بچے کیساتھ نامعلوم افرادکی اجتماعی بااخلاقی

لا ہور (خبر نگا ر ) کا ہنہ میں7 سا لہ لڑ کے کونا معلوم افرا د نے بد اخلاقی کا نشانہ بنا ڈا لا ۔ پو لیس نے مقد مہ نمبر 152\16در ج کر کہ تفتیش شروع کردی ہے ۔وا ضح ر ہے گزشتہ سال پنجا ب میں لڑکیوں کے مقابلے میں کم عمر لڑکوں سے بد اخلا قی کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ۔تفصیلا ت کے مطا بق کا ہنہ کا ر ہا ئشی غلا م علی جو مقامی فیکٹر ی میں محنت مزدوری کرتا ہے غلا م علی کا 7سا لہ بیٹا علی حسن جو شالیما رٹاؤن میں واقع نجی سکو ل میں تیسر ی جماعت کا طا لبعلم ہے۔پو لیس کے مطا بق علی حسن گزشتہ روز سکو ل سے چھٹی کے بعد گھر واپس جا ر ہا تھا کہ 2نا معلوم افرا د نے اسے اغواء کر لیا اور مقامی علاقہ میں واقع ایک ڈ یر ہ پر لے جا کر بد اخلا قی کا نشانہ بنا یا ،حالت غیر ہو نے پرسکو ل کے قر یب مسجد کے با ہر پھنک کر فرا ر ہو گئے ، علی جب گھر واپس نہ آ یا تو گھر والو ں کو تشویش لا حق ہو ئی جسے تلا ش کر نے سکو ل کے قر یب پہنچے تو علی حسن نیم بہوشی کی حا لت میں مسجد کے با ہر موجود تھا ۔ ور ثا ء کا کہنا ہے کہ علی حسن کو فو ر ی طبی امدا د کے لئے مقای ہسپتا ل منتقل کیا گیا اور پو لیس کو اطلا ع دی، پو لیس نے مقد مہ در ج کر کے تفتیش شروع کردی ہے ۔ واضح ر ہے گزشہ سال 2015 کے دورا ن چھ سے دس سال عمر کے لڑکوں میں پچھلے سال کی نسبت بد اخلا قی کے واقعات میں 4.3 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔ ر پو رٹ کے مطا بق گزشتہ سال میں پنجا ب بھر میں تمام عمر کے بچوں سے 1565 بد اخلا قی کے مقد ما ت رپورٹ ہوئے جبکہ 2014 میں اسی عرصے کے دوران یہ تعداد 1786 تھی۔بتا یا گیا ہے کہ گزشتہ سال پا کستا ن بھر میں 3500 کیس رپورٹ ہوئے تھے جبکہ حقیقی تعداد10ہزار تک ہو سکتی ہے۔

مزید : علاقائی