مشیر تجارت کینیا میں پاکستان افریقہ تجارتی ترقیاتی کانفرنس میں شرکت کے لئے آج نیروبی پہنچیں گے

مشیر تجارت کینیا میں پاکستان افریقہ تجارتی ترقیاتی کانفرنس میں شرکت کے لئے ...
مشیر تجارت کینیا میں پاکستان افریقہ تجارتی ترقیاتی کانفرنس میں شرکت کے لئے آج نیروبی پہنچیں گے

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت، صنعت و پیداوار اور سرمایہ کاری عبدالرزاق داد آج جمعرات کو شروع ہونے والی پاکستان افریقہ تجارتی ترقیاتی کانفرنس میں شرکت کے لئے نیروبی پہنچ رہے ہیں،ترقیاتی کانفرنس 30 اور 31 جنوری کو کینیا کے شہر نیروبی میں منعقد ہو گی۔

مشیرتجارت عبدالرزاق داد اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی افریقہ کے ساتھ پاکستان کے تعلقات کو اجاگر کرینگے۔ سکریٹری تجارت، سردار احمد نواز سکھیرا، افریقی مندوبین کو، پاکستان میں تجارت اور سرمایہ کاری کے مواقع پیش کریں گے اور انھیں پاکستان افریقہ تجارت اور سرمایہ کاری کی سطح کو بڑھانے، اور تجارت میں سہولت لانے کے لئے بینکاری اور ٹرانسپورٹ چینلز کی ترقی کے لئے دعوت دیں گے۔اس کانفرنس میں شرکت کے لئے معروف پاکستانی کمپنیوں کے نمائندے کینیا پہنچ گئے ہیں، ٹیکسٹائل، فارماسیوٹیکل اور سرجیکل سیکٹر، انجینئرنگ سامان، گھریلو ایپلائینسز، ٹریکٹر اور زرعی آلات، آئی ٹی خدمات، چاول، پھل اور سبزیاں، سیمنٹ اور تعمیرات۔ خدمات وغیرہ قومی ڈیٹا بیس رجسٹریشن اتھارٹی اور فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن کے نمائندے بھی اپنی خدمات پیش کرنے کے لئے کانفرنس میں پریزنٹیشن دیں گے، جبکہ سیکریٹری، وزارت سمندری امور، افریقی تاجروں کو بحری جہاز کے لئے پاکستانی بندرگاہوں کی خدمات پیش کرنے کے لئے ایک پریزنٹیشن دیں گیجس میں ان کا سامان افغانستان، وسطی ایشیا اور چین تک با اسانی رسائی حاصل ہو گی۔

کینیا کےوزیرتجارت،یوگنڈا کےوزیرمملکت،مصراورسوڈان کےمفکرین کانفرنس میں شریک ہیں۔اس کےعلاوہ، الجیریا، مراکش، تیونس، لیبیا، مصر، سینیگال، نائیجیریا، ایتھوپیا، تنزانیہ، نائجر، جنوبی افریقہ، زمبابوے، سوڈان، ماریشس، روانڈا، یوگنڈا، صومالیہ کے چالیس (40) سینئر عہدیدار اور ایک سو پچاس سے زیادہ تاجر اور برونڈی بھی آج کانفرنس میں شرکت کے لئے نیروبی پہنچ گئے ہیں،اس کانفرنس میں کینیا کی سو سے زیادہ کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں۔مصر، نائیجیریا، سوڈان، کینیا، جنوبی افریقہ، تیونس وغیرہ کے سینئر عہدیدار اپنے ممالک کی تجارت اور سرمایہ کاری کے امکانات پیش کریں گے اور پاکستان کے ساتھ تجارت کو بڑھانے کے لئے رابطوں پر تبادلہ خیال کریں گے۔ سینئر عہدیداروں کی سربراہی میں وفود کی دو طرفہ تجارتی امور پر تبادلہ خیال کے لئے مشیر تجارت، سکریٹری تجارت اور سکریٹری ٹی ڈی اے پی سے بھی ملاقاتیں ہوں گی۔دو روزہ ایونٹ کے لئے ٹی ڈی اے پی کے ذریعہ افریقی اور پاکستانی کمپنیوں کے مابین اب تک دو ہزار سے زیادہ بی ٹو بی ملاقاتوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔

مزید : قومی