آٹا بحران پیدا کرنیوالے اپنے تحفظ کیلئے کمیٹی بنارہے ہیں‘ لیاقت بلوچ

آٹا بحران پیدا کرنیوالے اپنے تحفظ کیلئے کمیٹی بنارہے ہیں‘ لیاقت بلوچ

  



ملتان (سٹی رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ انٹر نیشنل ٹرانسپرنسی رپورٹ، گورنر اسٹیٹ بنک کا بیانیہ، پنجاب، خیبر پی کے و بلوچستان حکومتوں کی جوتیوں میں بٹتی دال اور عمران خان کے لاپرواہ بے خبر وزیراعظم کے رویے نے عوام کا حشر نشر کردیاہے۔ آٹا بحران پیدا کرنے والے اپنے تحفظ کے لیے خود کمیٹی بنا رہے ہیں۔ مہنگائی، بے(بقیہ نمبر38صفحہ12پر)

روزگاری، افراط زر، پیداواری لاگت میں مسلسل اضافہ عوام کے لیے ناقابل برداشت ہوچکاہے۔ ریاست اور حکومت کے ایک پیج پر ہونے کے باوجود عوام کو کوئی ریلیف نہیں مل سکا۔ عملاً بھان متی کے کنبہ میں رکھی بارودی سرنگیں ریموٹ کنٹرول سے پھٹ رہی ہیں۔ حکومتی معاشی نظام کی ناکامی نوشتہ دیوار ہے۔انہوں نے کہاکہ امریکہ نے دو ریاستی فارمولا پیش کر کے عالم اسلام کی توہین کی ہے۔ قبلہ اول بیت المقدس ہے، اس پرناجائز قبضہ امن کی ضمانت نہیں بن سکتا۔ پاکستانی پارلیمنٹ موثر مشترکہ احتجاجی قرار داد منظور کرے اور فوری طور پر او آئی سی کا سربراہی اجلاس فلسطین اور کشمیر ایشو پر بلایا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ٹرمپ کی پاکستان کو چکنی چپڑی باتوں کی بلی تھیلے سے باہر آگئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان امریکی صدر کے جھوٹے سحر سے باہر آئیں اور عالم اسلام کے اتحاد کا بیڑا اٹھائیں۔

لیاقت بلوچ

مزید : ملتان صفحہ آخر