چھا بڑی فروشون نے ماہانہ ٹیکس مسترد کردیا فیصلہ واپس لینے کا مطالب

چھا بڑی فروشون نے ماہانہ ٹیکس مسترد کردیا فیصلہ واپس لینے کا مطالب

  



 لاہور( افضل افتخار) چھابڑی فروشو ں پر ماہانہ پانچ سو روپے کا ٹیکس عائد کرنا ان کو زندہ درگورکرنے کے مترادف ہے،یہ فیصلہ کسی بھی طرح سے درست نہیں اگر حکومت نے ٹیکس واپس نہ لیا تو بھرپور احتجاج کریں گے ان خیالات کا اظہار چھابڑی فروشوں نے ”پاکستان“ سروے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔ ریڑھی پر سبزی فروخت کرنے والے شوکت، ندیم، سلیم،حمید، زبیر اور ساجد نے کہا کہ ہم پہلے ہی پریشان ہیں اور بہت زیادہ مہنگائی ہوگئی ہے اب غریبوں پر یہ ظلم ڈھا دیاگیا ہے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ہم یہ ٹیکس نہیں دے سکتے اس لئے اس کے خاتمہ کا اعلان کیا جائے۔ حامد، پرویز، نبیل، دلبر، حامد، اکبر، ذیشان،عقیل اور ضمیر نے کہا کہ حکومت اس فیصلے کو واپس لے اور غریبوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دے۔ شکیل، ریحان، مانی، اسد، منیر، تنویر،شاہد،بابر اور شوکت نے کہا ہم اس ٹیکس کی مخالفت کرتے ہیں وزیر اعظم ٹیکس لگانے کے بجاے الیکشن کے دوران کئے جانے والے اپنے وعدے پورے کریں

مزید : میٹروپولیٹن 1