کلیم امام کی وزیراعظم سے ملاقات، سیکریٹری نارکوٹکس لگانے کا فیصلہ، آئی جی سندھ کیلئے عمران احمر کا نام تجویز

کلیم امام کی وزیراعظم سے ملاقات، سیکریٹری نارکوٹکس لگانے کا فیصلہ، آئی جی ...

  



اسلام آباد،کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے آئی جی سندھ کلیم امام کو سیکریٹری نارکوٹکس ڈویژن تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیراعظم عمران خان کے طلب کرنے پر کلیم امام اسلام آباد پہنچے جہاں اْن کی وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات ہوئی، ملاقات میں آئی جی سندھ نے صوبے میں امن و امان کی صورتحال اور اہم امور پر وزیراعظم کو بریفنگ دی۔ذرائع کے مطابق آئی جی سندھ کا کہنا تھاکہ میں نے اپنا کام نیک نیتی سے کیا اور میرا ٹریک ریکارڈ سب کے سامنے ہے۔کلیم امام نے مزید کہا کہ میں نے کبھی ذاتیات کو میرٹ پر ترجیح نہیں دی، حکومت کا ملازم ہوں، آئین کے مطابق کام کرنے کا پابند ہوں، اس لئے حکومت مجھے جہاں تعینات کرے، کوئی اعتراض نہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے کلیم امام کو وفاق میں اہم ذمہ داریاں دینے کا عندیہ دیا۔ذرائع کے مطابق کلیم امام کو سیکریٹری نارکوٹکس ڈویژن تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔دوسری طرف وفاقی حکومت نے نئے آئی جی سندھ کیلئے عمران احمر کا نام تجویز کردیا۔ وفاقی کابینہ نے سندھ حکومت کی جانب سے بھجوائے گئے غلام قادر تھیبو، مشتاق مہر اور ڈاکٹر کامران فضل کے ناموں پر اعتراض کیا تھا۔ذرائع کاکہناہے کہ آئی جی کی تقرری کیلئے گورنر سندھ عمران اسماعیل وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ سے ملاقات کرکے عمران احمر کے نام پر مشاورت کریں گے۔جبکہ ترجمان سندھ حکومت نے آئی جی سندھ کی تقرری کے معاملے پر گورنر عمران اسماعیل سے مشاورت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ترجمان سندھ حکومت نے بتایاکہ آئی جی کی تقرری ایک انتظامی معاملہ ہے،آئین وقانون میں گورنر سے مشاورت کا ذکر نہیں،کسی صوبے میں آئی جی کو ہٹانے اور تقرری کیلئے گورنر سے مشاورت نہیں ہوئی۔ صوبائی وزیر سعید غنی نے کہا ہے کہ نئے آئی جی کیلئے گورنر سے ملیں گے نہ ہی کوئی اور نام دیں گے، وفاق کو بھیجے گئے ناموں سے انتخاب کرنا ہوگا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے کلیم امام کو ہٹانے کی وجوہات کا وزیراعظم کو بتایا، صوبائی حکومت کی جانب سے بھیجے گئے آئی جی کے پانچ ناموں میں سے ایک نام پر وزیر اعلی سندھ اور وزیر اعظم میں اتفاق ہوگیا تھا مگر کابینہ کے اجلاس کے بعد فیصلہ تبدیل ہوا، پنجاب، خیبرپختونخوا میں آئی جی 30 منٹ میں تبدیل ہوجاتا ہے۔ڈی آئی جی خادم حسین اور ایس پی ڈاکٹر رضوان کے تبادلے غیر قانونی قرار دینے پر سعید غنی کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلے پر اختلاف ہے مگر عدالت کا فیصلہ ماننا لازم ہے۔علاوہ ازیں آئی جی پولیس سندھ کی تقریر پر حکومت سندھ نے شدیدبرہمی کا اظہار کرتے ہوئے کلیم امام کیخلاف چارج شیٹ تیارکرنے کی ہدایت کردی۔سندھ حکومت آئی جی کیخلاف چارج شیٹ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کوارسال کرے گی، ذرائع کا کہنا ہے کہ سیاسی تقاریر،کابینہ اراکین کیخلاف اقدامات کوچارج شیٹ کاحصہ بنایاجارہا ہے، چارج شیٹ میں وزیراعلی سندھ کیخلاف سازش کا بھی ذکر کیا جائے گا۔

آئی جی سندھ

مزید : صفحہ اول