آئی جی سندھ معاملہ نے ثابت کردیا یہ ایک نہیں دو پاکستان ہیں: بلاول بھٹو

  آئی جی سندھ معاملہ نے ثابت کردیا یہ ایک نہیں دو پاکستان ہیں: بلاول بھٹو

  



لاڑکانہ، اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے کہاہے جیالوں کے سیاسی ویژن کا دور دور تک کوئی موازنہ نہیں، انہوں نے ہر دور میں جبر کا سامنا کیا مگر کبھی حالات سے سمجھوتہ نہیں کیا، پاکستان جن حالات سے گزررہا ہے، جیالوں کا سیاسی شعور ہی مسائل کا حل پیش کرتا ہے۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے گزشتہ روز تعلقہ ڈوکری اورتعلقہ باقرانی کی ایگزیکٹوکمیٹیوں کے اجلاس سے الگ الگ خطاب کرتے ہوئے کیا۔قبل ازیں نوڈیروہاؤس میں بلاول بھٹو زرداری کی سر براہی میں تحصیل ڈوکری کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا،جس میں شعبہ خواتین کی مرکزی صدر فریال تالپور، تحصیل ڈوکری میں پی پی کی تمام تنظیموں کے عہدیدارا ن اور کارکنان شریک ہوئے۔ اس موقع پربلاول بھٹو زرداری نے کہاجیالے میرے آنکھ اور کان اورسفیر ہیں، اراکین اسمبلی بھی عوامی مسائل کے حل کیلئے کھلی کچہر یا ں کریں، مجھے فخر ہے تحصیل ڈوکری کے عوام نے ہر دور میں جمہوریت کا ساتھ دیا ہے، پیپلزپارٹی عوام اور کارکنوں کی جماعت ہے، ہم نظریے کیلئے جدوجہد کرنیوالے اور قربانی دینے والوں کو فراموش نہیں کرسکتے۔بعدازاں تعلقہ باقرانی کی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہیں تنظیموں کے عہدیداران اور کارکنان نے علاقہ کے مسائل، سیاسی و تنظیمی صورتحال سے آگاہ کیا، اس موقع پر بلاول بھٹو زرداری نے کہا تعلقہ باقرانی کے مسائل کے حل پر کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی کیونکہ تعلقہ باقرانی والے میرے اپنے لوگ ہیں، میں آپ کی محبتیں فراموش نہیں کرسکتا۔قبل ازیں چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹو یٹر پر اپنے ٹویٹ میں سندھ میں امن وامان پر آئی جی کیلئے پانچ نام وفاق کو بھیجے،سنیارٹی پر نام بھیجے لیکن پھر بھی وزیراعظم نے اتفاق نہیں کیا، یہ ایک نہیں دوپاکستان کی واضح مثال ہے، یہ نئے پاکستان کا مذاق ہے۔ آئی جی اسلام آباد کو غیر قانونی حکم نہ ماننے پر تبدیل کیا گیا تھا،جرم صرف اتنا تھا غریب کی گائے نے وزیر کے گھر میں گھسنے کی ہمت کی تھی۔ سندھ میں آئی جی کا معاملہ اس بات کا اظہار ہے نیا پاکستان کا نعرہ ایک مذاق ہے، یہ مضحکہ خیز ہوگا کہ اگر اس سارے معاملے کا نتیجہ عوام کی زندگیوں سے کھیلنے کے مترادف نہ نکلے۔

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول