پاکستانی تاجر انڈونیشیا میں سرمایہ کاری کریں: قونصل جنرل

پاکستانی تاجر انڈونیشیا میں سرمایہ کاری کریں: قونصل جنرل

  



کراچی (اکنامک رپورٹر)انڈونیشیا کے قونصل جنرل ٹوٹوک پریانامتونے کراچی کے صنعتکار وں کو انڈونیشیا میں تجارت کی نئی راہیں تلاش کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ انڈونیشیا کی حکومت پاکستان کے ساتھ دوطرفہ تجارتی تعلقات کو مزید مضبوط بنانا چاہتی ہے لہٰذا دونوں ملکوں کی تاجربرادری کو قریب لانے میں وہ پل کا کردار ادا کریں گے۔ یہ بات انہوں نے نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (نکاٹی) کے دورے کے موقع پر اجلاس سے خطاب میں کہی۔اجلاس میں نکاٹی کے سرپرست اعلیٰ کیپٹن اے معیز خان،سینئر نائب صدر عمران معیزخان، این کے آئی ڈی ایم سی کے سی ای او صادق محمد، چیئرمین این کے آئی ڈی ایم سی فراز مرزا، چیئرمین فیئرز، ایگزی بیشن وڈپلومیٹک افیئرز امتیاز شیخ، اراکین منیجنگ کمیٹی اور نکاٹی کے ممبران نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ قونصل جنرل نے نکاٹی کے ممبران کو انڈونیشیا کے دورے کی دعوت دیتے ہوئے کہاکہ نکاٹی تجارتی وفد تشکیل دے جس کا وہ خیرمقدم کریں گے اور وفدکو ہر ممکن سہولیات فراہم کرنے کے علاوہ انڈونیشین تاجروں کے ساتھ بزنس ٹو بزنس میٹنگز کا بھی اہتمام کیا جائے گا جبکہ تاجروں کو ترجیحی بنیاد پر ویزہ جاری کیا جائے گا۔ انڈونیشیا ہر سال جکارتہ میں ایک بڑی نمائش ”ٹریڈ ایکسپو انڈونیشیا“ کا انعقاد کرتا ہے جس میں کراچی کے تاجر شرکت کر کے کاروباری مواقعوں کا جائزہ لے کر فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی مصنوعات کی انڈونیشیا میں برآمدات بڑھانے کے لیے مزید کام کرنے کی ضرورت ہے جبکہ انڈونیشیا سے درآمد کی جانے والی مصنوعات کی جانب بھی توجہ دی جائے۔نکاٹی کے سرپرست اعلیٰ کیپٹن اے معیز خان نے کہاکہ پاکستان اور انڈونیشیا کے مابین دیرینہ اور شاندار دوستانہ تعلقات ہیں۔دونوں ممالک ایک دوسرے کے ساتھ کامیابی کے ساتھ تجارت کررہے ہیں تاہم دوطرفہ تجارتی تعلقات کو مزید مستحکم بنانے اور کاروباری شراکت داری کی وسیع گنجائش موجود ہے جس سے فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ پرامید ہیں کہ انڈونیشین قونصلیٹ تجارتی تعلقات کو بڑھانے میں اپنا کردار ادا کرے گا۔

مزید : کامرس