لاہور ہائیکورٹ،گندم کی درآمد اور چینی کی برآمد پرپابندی کی استدعا مسترد

لاہور ہائیکورٹ،گندم کی درآمد اور چینی کی برآمد پرپابندی کی استدعا مسترد

  



لاہور (نامہ نگار خصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس مامون رشید شیخ نے سٹیٹ بینک آف پاکستان کو حکم دیاہے کہ شوگر ملوں نے کتنی چینی بینکوں کے پاس رہن رکھوائی ہوئی ہے،فاضل جج نے چینی کی قیمتوں میں اضافہ اور آٹا کے بحران کے خلاف دائر درخواستوں کی سماعت کرتے ہوئے سٹیٹ بینک کے نمائندے کو ہدایت کی کہ اس بابت تمام بینکوں سے ڈیٹا لے کرعدالت کو آگاہ کیا جائے۔فاضل جج نے گندم کی درآمد اور چینی کی برآمد پرپابندی کی استدعا مستردکردی،یہ استدعا درخواست گزاروں کی طرف سے کی گئی تھی،عدالت نے شوگرملز میں چینی کی تیاری،فروخت اور سٹاک کا ریکارڈ بھی طلب کرلیاہے، عدالت نے شوگر ملز سے متعلق مجوزہ نئی قانون سازی کی تفصیلات بھی طلب کرلی ہیں۔عدالت نے استفسار کیا ہے کہ گنے کی پیداوار کس وجہ سے کم ہوئی ہے، عدالت نے کہاکہ اگرشوگرملیں خسارے میں ہیں تو اب تک بند ہوجانی چاہیے تھیں، کرشنگ سیزن شروع ہونے کے باوجود شوگر ملیں بند کیوں کی گئیں، چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ اگرملک میں گندم موجود ہی نہیں تو ایکسپورٹ کیسے ہوسکتی ہے؟ وکلاء کے دلائل جاری تھے کہ کیس کی مزید سماعت 3فروری تک ملتوی کردی گئی۔

گندم

مزید : صفحہ آخر