نوجوان اخلاق احمد کے اندھے قتل میں ملوث 2 رشتہ دار گرفتار

  نوجوان اخلاق احمد کے اندھے قتل میں ملوث 2 رشتہ دار گرفتار

  



لاہور(کرائم رپورٹر) انویسٹی گیشن پولیس نے چند روز قبل 25سالہ اخلاق احمد کے اندھے قتل کی سنگین واردات کو ٹریس کر کے اس میں ملوث مقتول کے2قریبی رشتہ داروں کو گرفتار کر لیا ہے۔ انچارج انویسٹی گیشن قلعہ گجر سنگھ مجاہد حسین اور دیگر اہلکاروں پر مشتمل پولیس ٹیم نے سی سی ٹی وی کیمروں، فنگر پرنٹس اور جدید ٹیکنالوجی سے مقتول اخلاق احمد کے اندھے قتل کی واردات کو ٹریس کر کے اس کے ساتھ رہائش پذیر اس کے 2رشتہ داروں مظہر خان اور تابش کو گرفتار کر لیا ہے۔ایس پی انویسٹی گیشن اسد الرحمن کا مزید کہنا تھا کہ دوران تفتیش ملزمان نے اعتراف جرم کرتے ہوئے بتلایا کہ وہ مقتول اخلاق احمد کے قریبی رشتہ دار ہیں اورمانسہرہ کے رہائشی ہیں۔ اخلاق احمد آٹو سپیئر پارٹس کا کام کرتا تھا،اچھی خاصی کمائی تھی، ملزمان نے حسد میں آ کر اخلاق احمد کو قتل کرنے کا منصوبہ بنایا اور کمرے میں اکٹھے ہو گئے۔ایک وزنی پتھر بھی باہر سے ساتھ لے آئے۔جب اخلاق گہری نیند سو گیا تو اس کے سر پر پتھر مار کر اسے قتل کر دیا۔اس کے بعد دونوں ملزمان پتھرکو کمرے سے باہر پھینک کر چپکے سے فرار ہو گئے۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزمان شک سے بچنے کے لیے مقتول کزن اخلاق احمد کے ورثاء سے ہمدردی کا ڈرامہ رچاتے رہے اور پولیس سے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ بھی کرتے رہے۔ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ڈاکٹر انعام وحید خان نے اندھے قتل کی سنگین واردات کو ٹریس کرنے پر پولیس ٹیم کیلئے نقد انعامات اور تعریفی اسناد کا اعلان کیا ہے۔

مزید : علاقائی