وزیراعظم حج 2021ء میں پاکستان کو شامل کرنے کیلئے کردار ادا کریں: طاہر منظور چودھری 

وزیراعظم حج 2021ء میں پاکستان کو شامل کرنے کیلئے کردار ادا کریں: طاہر منظور ...

  

 لاہور(انٹر ویو میاں اشفاق انجم تصاویر ایوب بشیر) ہوپ پاکستان کے سینئر وائس چیئرمین طاہر منظور چوہدری نے روزنامہ پاکستان سے خصوصی انٹر ویو میں کہا ہے کہ حج 2021ء میں اہل پاکستان کو شامل کرنے کیلئے وزیراعظم عمران خان کردار ادا کریں۔ عمرہ کیلئے 18تا 50سال عمر کی حد نے عمرہ کا کاروبار ٹھپ کر دیا ہے،عمرہ اور حج کیلئے عمر کی حد ختم کی جا ئے، گزشتہ سال کی طرح امسال بھی حج محدود ہوتا ہے تو سارا حج پرائیویٹ کے سپرد کیا جائے،وزارت مذہبی امور سرکاری حج سکیم کی درخواستوں کی وصولی کیلئے بنکوں سے ٹینڈ ر طلب کر رہی، پرائیویٹ سیکٹر 50فیصد کا سٹیک ہولڈرہے، ان سے بھی کا غذات کی وصولی کا مرحلہ مکمل کرلیا جائے،حج کا اعلان 31مارچ کے بعد ہوتا ہے تو کمپنیوں سے ہنگامی طور پر کاغذات اور محکموں سے NOCحاصل کرنا ممکن نہیں ہو گا۔ سینئر وائس چیئرمین ہوپ نے کہا حکومتی عدم دلچسپی اور ریلیف پیکج نہ دیئے جانے کی وجہ سے ٹریول کے بعد عمرہ کاروبار تباہ ہو چکا، سیکڑوں دفاتر بند ہو گئے ہیں، ہزاروں افراد بیروزگار ی کا شکار ہیں، سعودیہ میں کام کرنیوالے بڑے بڑے گروپ دیولیہ کا شکار ہیں،سعودیہ کے ہوٹلز، ٹرانسپورٹ اور کیٹر نگ کی صنعت بْری طرح تباہ ہو گئی ہے، عمرہ نام کی حد تک چل رہا ہے،2019ء میں 17لاکھ افراد نے عمرہ کیا تھا،امسال کووڈ 19-کی وجہ سے ابھی تک 500افراد نہیں جا سکے۔ اسکی بنیادی وجہ عمر کی 18تا 50سال کی شرط ہے اگر حج میں بھی یہ شرط برقرار رکھی گئی تو سرکاری سکیم میں تو ایک فرد بھی نہیں جائیگا، طاہر منظور چوہدری نے مطالبہ کیا وزیر اعظم سعودی حکومت سے مذاکرات کریں، حج 2021ء کیلئے پاکستان کو شامل کروائیں اور عمرہ اور حج کیلئے عمر کی شرط ختم کروائیں، انڈونیشاء حکومت کے مطالبے پر عمرہ کیلئے عمر کی حد 60سال کر دی گئی ہے، پاکستان بھی مطالبہ کرکے عمر کی شرط مکمل ختم کرائے ورنہ ٹریول، عمرہ کی صنعت کی مکمل تباہی یقینی ہے، کووڈ 19-کی وجہ سے سعودیہ کی طرف سے سخت ترین ایس او پیز کی وجہ سے سرکاری حج ممکن نہیں، 45کی بس میں 22افراد سوار کرنے کی شرط، منیٰ، عرفات، مزدلفہ کیلئے کڑی شرائط اور مکہ، مدینہ میں فائیو سٹار ہوٹلز کی شرط کی وجہ سے حج بے تحا شا مہنگا ہو جائیگا، جو سرکاری سکیم میں ممکن نہیں، اسلئے پرائیویٹ سیکٹر کی 15سالہ شاندار کارکردگی کی وجہ سے حج 2021ء کا مکمل اپریشن پرائیویٹ سیکٹر کی سپر دکیا جائے،ہم ضیوف الرحمن کی لازوال خدمت کا فریضہ احسن انداز میں انجام دینے کی روایت بر قرار رکھیں گے، وزارت مذہبی امور سرکاری حج کی طرح پرائیویٹ سیکٹر کے حج آرگنائزر کو فائنل کرنے کا مرحلہ بھی مکمل کرے،ہنگامی طور پر ایسا ممکن نہیں ہو سکے گا، اگر حج نہیں ہو گا تو سرکاری کی طرح پرائیویٹ بھی نہیں ہو گا،حکومت سرکاری حج کی تیاری کر کے پرائیویٹ سیکٹر کو نظر انداز کرنے کا تاثر نہ دے اور ہمارے ساتھ بھی مذاکرات کرے۔ 

طاہر منظور چوہدری

مزید :

صفحہ آخر -