پولیس وردی میں ملبوس افرادکی جانب سے اٹھائے جانیوالے تاجروں کاپتہ نہ چل سکا

پولیس وردی میں ملبوس افرادکی جانب سے اٹھائے جانیوالے تاجروں کاپتہ نہ چل سکا

  

لاہور(کرائم رپورٹر)چونگی امر سدھو کوٹ لکھپت کے علاقہ سے گزشتہ رات گئے چند سادہ اور پولیس وردی میں ملبوس اہلکاروں نے شامی پارک مارکیٹ کے جنرل سیکرٹری حافظ رفاقت اور اس کے ایک ساتھی دکاندار کو اغوا کرلیا  دو دن گزرنے کے باوجود تاحال پتہ نہیں چل سکا کہ اہلکار اسے کہاں لے گئے ہیں موغیان کی زندگی کے بارے میں لواحقین سخت پریشان ہیں اور انہوں نے وزیر اعلی پنجاب آئی جی پولیس  اورسی سی پی او لاہور سے ان کی بازیابی کا مطالبہ کیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب تقریبا دو بجے حافظ رفاقت چونگی امر سد ھوشامی پارک مارکیٹ میں موجود تھے کہ اس دوران اچانک پولیس کی ایک نامعلوم گاڑی آئی جس میں سول اور وردی میں ملبوس اہلکار سوار تھے اور انہوں نے آتے ہی ایک دکاندار کو حراست میں لینے کی کوشش کی جس پر حافظ رفاقت نے بیٹھ کر بات کرنے کو کہا اہلکاروں نے اسے بھی زبردستی اٹھایا اور دونوں کوگاڑی میں ساتھ لے کر چلے گئے اس واقعہ کی اطلاع جب اہل خانہ کو ملی تو انہوں نے فورا ًمقامی پولیس سمیت شہر بھر کے مختلف تھانوں سے معلوم کیا مگر کسی بھی تھانے نے ان کو حراست میں لینے کی تصدیق نہیں کی جس پر مارکیٹ کے دکانداروں اور اہل خانہ میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے مقامی دکانداروں اور اہل خانہ نے ارباب اختیار سے ان کی بازیابی کا مطالبہ کیا ہے ورنہ سخت احتجاج کی دھمکی دی ہے۔ 

مزید :

علاقائی -