جھوٹے نعرے لگانے، دوسروں پر کیچڑ اچھالنے والا خود کرپشن کا بادشاہ نکلا: مریم نواز

  جھوٹے نعرے لگانے، دوسروں پر کیچڑ اچھالنے والا خود کرپشن کا بادشاہ نکلا: ...

  

 لاہور،اسلام آباد، (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ کرپشن کے جھوٹے نعرے لگانے اور دوسروں پر کیچڑ اچھالنے والا خود کرپشن کا بادشاہ نکلا۔ اپنے ٹویٹ میں مریم نواز نے کہاکہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے گواہی دی کہ دو سالوں سے پاکستان کرپشن کی دلدل میں دھنس رہا ہے۔اس نے سچ ہی کہا تھا کہ وزیراعظم کرپٹ ہو تو ہر طرف کرپشن ہی کرپشن ہوتی ہے لیکن بندہ ایماندار ہے۔مسلم لیگ(ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ قانون سے بالاتر صرف عمران صاحب ہیں مالم جبہ، فارن فنڈنگ، بلین ٹری سونامی، بی آر ٹی، بنی گالہ، زمان پارک،400 ارب چینی، سوا200 ارب آٹا،122 ارب ایل این جی میں چوری عمران صاحب کے قانون سے بالاتر ہونیکی مثالیں ہیں، مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب قومی خزانے کی چوری اور براڈ شیٹ میں کمیشن کھانے سمیت تمام ڈکیتیوں میں سہولت کار ہیں،عمران صاحب آپ ہزاروں نہیں فارن فنڈنگ اکاؤنٹس کا جواب دیں، آئیں بائیں شائیں کا کوئی فائدہ نہیں عمران صاحب اسلامی فلاحی ریاست اسرائیل اور بھارت سے غیر قانونی فنڈنگ لے کر نہیں بنتی،بہنوئی کے پلاٹ کا قبضہ چھڑانے کیلئے جہادمیں پنجاب کے 6آئی جیز شہیدہوگئے۔شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبا ل  نے کہا ہے کہ حکومت میں نہ کوئی شرم ہے نہ کوئی حیا  ہے، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ موجودہ حکومت کی کرپشن کا منہ بولتا ثبوت ہے، حکومت اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے اور ممبر اسمبلی کو دبانا چاہتے ہیں، سپیکر کا کام ایوان کے حقوق اور ممبران کے حقوق کا دفاع کرنا ہوتا ہے، پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ میں کوئی انتشار نہیں، پروجیکٹ عمران خان وہ اب ناکام ہوچکا ہے اب اس پروجیکٹ کی ناکامی کے ساتھ ساتھ ملک اور ریاست  بھی ڈوب رہی ہے، شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو ایوان کی مطلق پرواہ نہیں ہے اور حکومت میں نہ کوئی شرم ہے نہ کوئی حیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ موجودہ حکومت کی کرپشن کا منہ بولتا ثبوت ہے اور یہ حکومت مسلسل عوام کے سامنے جھوٹ  بول رہی ہے۔ شاہد خاقان عباسی  نے کہا کہ حکومت نے مسلم لیگ (ن)  کے ممبر قومی اسمبلی افضل کھوکھر کے گھر کو چار روز پہلے گرایا تھا اس پر ایوان پر بحث کرانا چاہتے ہیں کیونکہ حکومت اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے اور ممبر اسمبلی کو دبانا چاہتے ہیں ہماری طرف سے اس معاملے کو استحقاق کمیٹی کے سامنے پیش کرنے کا مطالبہ کیا گیا لیکن سپیکر قومی اسمبلی اس پر کوئی جواب نہیں دے سکے۔ البتہ وفاقی وزیر نے تحریک استحقاق کمیٹی کو بھیجنے کے بجائے طرح طرح الزامات لگائے اور بدقسمتی سے سپیکر قومی اسمبلی  بھی کوئی فیصلہ نہیں دے سکے۔ شاید خاقان عباسی نے کہا کہ سپیکر کا کام ایوان کے حقوق اور ممبران کے حقوق کا دفاع کرنا ہوتا ہے۔ چاہے وہ اپوزیشن  کے  ہوں یا حکومت کے ہوں۔ انہوں نے کہا کہ  وزیر دفاع پرویز خٹک اپوزیشن سے ملنے آئے تھے اور انہوں نے بتایا تھا کہ رولز کے مطابق اسمبلی کو چلایا جائے گا لیکن آج ہی ان کی جانب پھر ایوان کی کارروائی خراب کرنے کی کوشش کی گئی ہے کیونکہ حکومت نہیں چاہتی کہ ایوا ن کو درست طریقے سے چلایا جائے۔  شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ میں کوئی انتشار نہیں ہے اختلاف رائے ہوتا ہے اور اتفاق رائے سے ہی پی ڈی ایم کے فیصلے ہوتے ہیں۔  پی ڈی ایم متحد ہے اور حکومت کے خلاف تحریک آگے کی سمت جارہی ہے۔ اس موقع پر احسن اقبال نے کہا کہ اس ملک میں ایک پروجیکٹ شروع کیا گیا تھا جس کا نام  تھا پروجیکٹ عمران خان وہ اب ناکام ہوچکا ہے اب اس پروجیکٹ کی ناکامی کیساتھ ساتھ ملک اور ریاست  بھی ڈوب رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تین سال حکومت کے ناکامی کے بعد عمران خان اپنے ترجمانوں کے ذریعے یہ پیغام دے رہا ہے کہ عمران خان کے علاوہ سب لوگ چور‘ ڈاکو اور غدار ہیں۔  انہوں نے عمران خان کے اوپر تنقید کرتے ہوئے مزید کہا کہ قوم اس جعلی ایماندار نیازی  عمران خان کواچار ڈالیں کہ جب اس کے ہوتے ہوئے اس ملک میں بدترین مہنگائی‘ بے روزگار‘ کرپشن‘ عربت اور بدترین خارجہ پالیسی ہے سی پیک بند اور کرپشن کے نئے ریکارڈ  بنتے ہیں تو پھر یہ ایمانداری نہیں  بلکہ بدترین نالائقی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے وزراء اور وزیراعظم نے ہمیں کہا کہ جب آپ لوگ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کا اردو ترجمہ کریں گے تو یہ سب مسلم لیگ کا ڈیٹا نکلے گا۔ احسن اقبال نے کہا کہ یہ رپورٹ 2019-20 کی ہے اور اسی حکومت کا  ڈیٹا ہے اس سے حکومت نے ہمیں یہ بتایا کہ وزیراعظم اور ان کے وزیر سادہ انگریزی بھی نہیں پڑھ سکتے۔ انہوں نے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے مزید کہا کہ ہمیں اب آکسفورڈ یونیورسٹی سے یہ استفسار کرنا پڑے گا کہ آپ لوگوں نے عمران خان کو کس طرح ڈگری دی ہے جو سادہ انگریزی کا ترجمہ بھی نہیں کرسکتا۔

مریم نواز

مزید :

صفحہ اول -