افغان طالبان نے امن معاہدے میں کئے وعدے ایفا نہیں کئے، پینٹا گون کا شکوہ 

  افغان طالبان نے امن معاہدے میں کئے وعدے ایفا نہیں کئے، پینٹا گون کا شکوہ 

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) طالبان نے امریکہ کیساتھ کئے جانیوالے امن معاہدے میں طے وعدے پورے نہیں کئے۔ترجمان پینٹاگون جان کر بی نے گزشتہ روز نیوز بریفنگ میں یہ شکوہ کرتے ہوئے بتایاافغان طالبان نے تشدد میں کمی کی نہ ہی القاعدہ سے تعلقات توڑے، امریکہ اب بھی افغا نستان کے مسئلے کوبات چیت کے ذریعے حل کرنے کی کوششوں کو جاری رکھے ہوئے ہے۔ قطر کے دارالحکومت دوہا میں فروری 2020ء میں امریکہ نے طویل مذاکرات کے بعد طالبان کیساتھ افغانستان میں قیام امن کیلئے ایک جامع معاہدے پر دستخط کئے تھے۔ امریکہ کے خصوصی مندوب زلمے خلیل زاد نے سابق صدرٹرمپ کے دور میں یہ معاہدہ طے کرنے کیلئے زبردست سفارتی جدو جہد کی تھی اور اس سلسلے میں پاکستان کا تعاون بھی حاصل کیا تھا۔ نئے امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بلنکن نے نئی انتظامیہ میں بھی زلمے خلیل زاد کا عہدہ برقرار رکھا اور انہیں اپنا مشن جاری رکھنے کی تلقین کی ہے۔ پینٹاگون کے ترجمان نے بائیڈن انتظامیہ کے نئے دور میں پہلی مرتبہ افغان طالبان کیساتھ امریکہ کے امن معاہدے کے بارے میں پالیسی بیان دیتے ہوئے واضح کیا کہ امریکہ نے معاہدے کے تحت افغانستان میں موجود اپنی فوج میں نمایاں کمی کی ذمہ داری پر عمل کیا جو تیرہ ہزار سے کم ہوکر اب صرف اڑ ھائی ہزار رہ گئی ہے۔ ترجمان نے کہا افغان طالبان کی طرف سے معاہدے پر پورا عملدرآمد نہ ہونے کے باوجود امریکہ معاہدے کو برقرار رکھتے ہوئے طالبان پر وعدے پو ر ے کرنے کیلئے کوششیں جاری رکھے گا۔ معاہدے میں طے ہوا تھاطالبان امریکی افواج پر حملے بند، افغانستان میں تشدد میں کمی لائیں گے، القاعدہ و دیگر شدت پسند گروہوں سے تعلقات مکمل ختم اور کابل انتظامیہ کیساتھ امن مذاکرات کا آغاز کرینگے۔جان کربی نے بتایا طالبان کی طرف سے اپنے تمام وعدوں پر صحیح طریقے سے عمل نہ کرنے کے باوجود ان کیساتھ معاہدہ برقرار ہے اور امریکہ کے وعدوں میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔افغانستان میں موجود امریکی فوج کی موجودہ اڑھائی ہزار کی نفری سے پینٹاگون مطمئن ہے جو اس کے وہاں سفارتخانے و دیگر تنصیبات کی حفاظت کیلئے کافی ہے۔ علاوہ ازیں ہ کابل انتظامیہ کے القاعدہ اور داعش کے جنگجوؤں سے مقابلے میں بھی کچھ مدد فراہم کرسکتی ہے، تاہم انہوں نے یہ واضح نہیں کیا اگر طالبان نے اپنے وعدوں پر عملدرآمد نہ کیا تو کیا امریکہ افغانستان میں موجود اپنی فوج کو صفر کی سطح پر لائے گا یا نہیں۔؟

پینٹاگون

مزید :

صفحہ اول -