عاصم شہریار کی بحیثیت چیف ایگزیکٹو آفیسر اگنائٹ میں شمولیت

 عاصم شہریار کی بحیثیت چیف ایگزیکٹو آفیسر اگنائٹ میں شمولیت

  

اسلام آباد(پ ر)وزارتِ آئی ٹی اینڈ ٹیکنالوجی کے تحت پاکستان میں ٹیک انوویشن اور ٹیک سٹارٹ اپ ماحولیاتی نظام کے فروغ اور مالی اعانت کے لیے قائم کیا گیا ادارہ  اگنائٹ، نیشنل ٹیکنالوجی فنڈ جناب عاصم شہریار حسین کی نئے  چیف ایگزیکٹو آفیسرکی حیثیت سے شمولیت کا اعلان کرتے ہوئے خوشی محسوس کر رہا ہے۔ عاصم شہریار حسین نے پاکستان اور امریکہ میں کارپوریٹ حکمتِ عملی، بزنس پلاننگ، پراڈکٹ مینجمنٹ، پراجیکٹ مینجمنٹ،  فنانشل مینجمنٹ، مارکیٹنگ پلاننگ،اور ٹیک مصنوعات و خدمات کی سیلزمیں 25 سال سے ذیادہ تجربے کے منفرد امتزاج کے ساتھ نجی اور سرکاری دونوں شعبوں میں خدمات انجام دیں۔اگنائٹ میں شامل ہونے سے پہلے انھوں نے آئی ٹی / سافٹ وئیر، ٹیلی کام، براڈ بینڈ، اور فنٹیک سمیت مختلف ٹیکنالوجی شعبوں میں اپنی مہارت کو بروئے کار لاتے ہوئے 7 سال تک پاکستان سافٹ وئیر ایکسپورٹ بورڈ اور کامسیٹس انٹرنیٹ سروسز جیسی تنظیموں کی سربراہی کی۔ ایم ڈی PSEB کی حیثیت سے انکی مدت ِ ملازمت کے دوران، پاکستان کی آئی ٹی ترسیلاتِ زر میں 78% اضافہ ہوا۔ انھوں نے ورلڈ بینک کے فنانشل انکلوژن اینڈ انفراسٹرکچر پراجیکٹ کے پراجیکٹ ڈائریکٹر کے طور پرفنانس ڈویژن کے ساتھ 2.5 سال سے ذیادہ عرصہ تک کام کیا۔ عاصم نے سٹینفوڈ یونیورسٹی (1992) سے کمپیوٹر سسٹم انجینئیرنگ میں بیچلرز اور امریکہ کی Fuqua School of Business at Duke Universityسے ایم بی اے کیا ہے۔ وہ ایک سرٹیفائیڈ پراجیکٹ مینجمنٹ پروفیشنل بھی ہیں۔اس موقع پر تبصرہ کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ:  میں اگنائٹ کا حصہ بننے  اور پاکستان کے ٹیک سٹارٹ اپ ماحولیاتی نظام کے فروغ کے لیے میں نے PSEB  میں جو کچھ کیا تھا اس سے بھی ذیادہ مزید فعال کردار ادا کرنے کا موقع ملنے پر بہت پُر جوش ہوں۔ سپلائی سائڈ میں اگنائٹ کی جانب سے اب تک بہترین کام کیاگیا ہے۔ اب وقت آیا ہے کہ ڈیمانڈ سائڈ پر توجہ دی جائے اور سٹارٹ اپس کے لیے ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے منصوبوں پر تیزی سے کام کیا جائے۔ 

اگنائٹ اپنے فلیگ شپ DigiSkills پروگرام کے تحت نئے کورسز بھی پیش کریگا،جو اب تک 1 ملین سے ذیادہ ٹریننگز دے چکا ہے۔ میرا وژن یہ ہو گا کہ ہمارے سٹارٹ اپ ماحولیاتی نظام کو ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے ذریعے  ہائی گروتھ سٹارٹ اپس کے ساتھ منسلک کیاجائے تاکہ وہ درمیانے اور اونچے درجے کی ٹیک کمپنیاں بن سکیں۔

مزید :

کامرس -