بہاولپور، کڈنی سنٹر سے ماہر ڈاکٹرز کا تبادلہ، ٹرانسپلانٹ آپریشن بند، مریضوں کا اللہ حافظ 

بہاولپور، کڈنی سنٹر سے ماہر ڈاکٹرز کا تبادلہ، ٹرانسپلانٹ آپریشن بند، ...

  

  بہاولپور(بیورو رپورٹ)بہاول پور کا کڈنی سنٹر زبوں حالی کا شکار ہے قابل ڈاکٹروں کو سازش کر کے بہاول پور سے نکالا جانے لگا۔ گردوں کی پیوندکاری کا عمل بھی رک گیا۔ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے بہاول پور میں سٹیٹ آف دی آرٹ کڈنی سنٹر بنایا۔ اس کڈنی سنٹر میں گردوں کے ٹرانسپلانٹ کے لئے جدید مشینری نصب کی گئی جبکہ ماہر اور قابل ڈاکٹروں کا تقرر عمل میں لایا گیا۔ یہ جنوبی پنجاب کا واحد کڈنی سنٹر ہے جس میں نیفرالوجسٹ کی تعیناتی بھی عمل میں لائی گئی لیکن   سازشوں   نے بہاول پور کے اس سٹیٹ آف دی آرٹ کڈنی سنٹر کو اجاڑنے کا پروگرام بنایا اور یہاں سے ٹرانسپلانٹ کرنے والے ماہر ڈاکٹر جس نے مختصر مدت میں 45کامیاب ٹرانسپلانٹ آپریشن کئے تھے کو یہاں سے نکال(بقیہ نمبر55صفحہ6پر)

 کر ملتان بھجوا دیا۔ اسی طرح دیگر قابل ڈاکٹروں کے کنٹریکٹ میں بھی توسیع نہیں کی جا رہی۔ ان تمام سازشوں کے باعث کڈنی سنٹر بہاول پور میں گردوں کے ٹرانسپلانٹ آپریشن بند ہو چکے ہیں اور اس علاقہ کے مریض دھکے کھانے اور موت کو گلے لگانے پر مجبور ہیں۔ سب سے افسوسناک بات یہ ہے کہ بہاول پور کے عوامی نمائندے بھی اس طرف توجہ دینے کو تیار نہیں اور ان کی آنکھوں کے سامنے کڈنی سنٹر اجڑتا جا رہا ہے۔ بہاول پور کے عوام پریشان ہیں کہ وہ اس حوالے سے کس کو اپنا پرسان حال بنائیں۔

منصوبہ

مزید :

کامرس -