کرپشن ختم کرنیکا حکومتی دعویٰ جھوٹ، حالات سنگین، افتخار خان

  کرپشن ختم کرنیکا حکومتی دعویٰ جھوٹ، حالات سنگین، افتخار خان

  

خان گڑھ(نما ندہ پاکستان، نامہ نگار) پاکستان پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے سیکرٹری انفارمیشن و رکن قومی اسمبلی نوابزادہ افتخار احمد خان نے جمعہ کے روز میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے سفید پوش،مزدور اور غریب طبقے کے لوگوں کا خیال رکھنے کی بجائے کنسٹرکشن،انڈسٹری مالکان کو ایمنسٹی پیکیج سے بینکرز اور اسٹاک بروکرز اور امیر ترین لوگوں کو نواز رہے ہیں جبکہ دوسری جانب ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے صادق اور امین کی حکومت کا پوسٹ(بقیہ نمبر21صفحہ6پر)

 مارٹم کر دیا ہے۔ کرپشن ختم کرنے کا دعوی جھوٹ ثابت ہوا۔ عجب کرپشن کی غضب کہانیاں آئے روز سامنے آ رہی ہیں۔ سلیکیٹڈ وزیراعظم کی کارکردگی زیرو ہے جبکہ کابینہ کی کارکردگی زیرہ پلس زیرہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کہاں ہیں ایک کروڑ نوکریاں اور50 لاکھ گھر؟ سلیکیٹڈ وزیراعظم کی کارکردگی صرف بنی گالہ محل کو بچانے تک محدود ہے اور حکومت کی ترجیحات قومی اداروں کی لوٹ سیل ہے جو کہ قابل مذمت اور افسوسناک امر ہے۔نوابزادہ افتخار خان کا کہنا تھا کہ مہنگائی دو سو فیصد بڑھ گئی ہے،غریب مر رہا ہے اور ہمارا وزیراعظم بس کہہ رہا ہے کہ گھبرانا نہیں۔انہوں نے کہا موجودہ دور میں غریب گوشت تو دور کی بات ہے دال روٹی کے لیے بھی ترس گیا ہے۔ مگر حکومتی ارسطو ٹی وی ٹاک شوز میں آ کر معاشی کامیابیاں کا راگ الاپ رہے ہیں۔ سرکاری اداروں میں 70 ہزار خالی آسامیوں کو ختم کیا جا رہا ہے قومی اداروں سٹیل ملز، ریڈیو پاکستان،پی ٹی وی،اسٹیٹ لائف انشورنس، پی ٹی ڈی سی،لیڈی ہیلتھ ورکرز،پنشرز،ایڈہاک ملازمین کو روزی سے محروم کیا جا رہا ہے اور اب تھرمل پاور پلانٹ مظفرگڑھ کو بند کرنے کا پروگرام بنا لیا گیا ہے اس سے مزید ہزاروں افراد بے روزگار ہوں گے انہوں نیکہا کہ عوام اب ان نااہل حکمرانوں سے نجات کے لئے نوافل ادا کر رہے ہیں۔

افتخار خان

مزید :

کامرس -