حمل کے دوران کورونا وائرس کا شکار ہونے والی خواتین پر تازہ تحقیق کے حیران کن نتائج سامنے آگئے

حمل کے دوران کورونا وائرس کا شکار ہونے والی خواتین پر تازہ تحقیق کے حیران کن ...
حمل کے دوران کورونا وائرس کا شکار ہونے والی خواتین پر تازہ تحقیق کے حیران کن نتائج سامنے آگئے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) حاملہ خواتین کے لیے کورونا بہت زیادہ خطرناک ثابت ہو سکتا ہے تاہم اب نئی تحقیق میں اس حوالے سے ایک اور حیران کن بات بتا دی گئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق امریکی سائنسدانوں نے اپنی اس تحقیق کے نتائج میں بتایا ہے کہ اگر حاملہ خاتون کورونا وائرس کا شکار ہو اور صحت مند ہو جائے تو اس کے جسم میں بننے والی اینٹی باڈیز اس کے بچے کو ملنے کا بھی امکان ہوتا ہے۔

تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ ڈاکٹر کیرن پوپولو کا کہنا تھا کہ ”ہم نے اس تحقیق میں ماﺅں اور ان کے ہاں پیداہونے والے بچوں کے خون کے 1700نمونوںکے ٹیسٹ کیے۔ ان میں سے 83مائیں ایسی تھیں جو کورونا وائرس میں مبتلا رہیں اور ان کے جسم میں اینٹی باڈیز موجود تھیں۔ ان 83ماﺅں میں سے 72(87فیصد) کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں میں بھی اینٹی باڈیز موجود تھیں۔ “

مزید :

تعلیم و صحت -کورونا وائرس -