مصر: نئی حکومت کی تشکیل کا اعلان ایک ہفتے کے لیے ملتوی، مشاورت جاری

مصر: نئی حکومت کی تشکیل کا اعلان ایک ہفتے کے لیے ملتوی، مشاورت جاری

  

قاہرہ(آن لائن)عوامی جمہوریہ مصر کے صدارتی ترجمان ڈاکٹر یاسر علی نے کہا ہے کہ صدر ڈاکٹر محمد مرسی کے مشیروں پرمبنی کمیٹی دو اگست کوحکومت کے قیام کا اعلان کرے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی تشکیل میں تاخیر اس لیے کی گئی ہے کیونکہ ڈاکٹر محمد مرسی حکومت کے اختیارات اور ملک کو درپیش چیلنجز کے مطابق حکومت کی ذمہ داریوں پر مزید مشاورت کرنا چاہتے ہیں۔ ادھر ذرائع کے حوالہ سے عرب میڈیا نے بتایا ہے کہ نامزد وزیر اعظم ھشام قندیل کو اپنی کابینہ کے انیس وزراء کے تقرر کا اختیار دیا گیا ہے تاہم وزارتوں کے بقیہ قلمدانوں کے لیے مشاورت جاری ہے۔قبل ازیں وزیر اعظم ڈاکٹر ھشام کی جانب سے کہا گیا تھا کہ وہ ہفتے کے روز قومی حکومت کی تشکیل کا اعلان کریں گے تاہم بعد ازاں یہ اعلان ایک ہفتے کے لیے موخر کر دیا گیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کے اختیارات اور مزید وزارتوں کے بارے میں خفیہ مشاورت بھی ہو رہی ہے۔ وزارتوں کے لیے نامزد امیدواروں کے کاغذات کی جانچ پڑتال کا عمل ھنوز ابھی جاری ہے۔دوسری جانب مصر کے سیاسی حلقوں میں حکومت کی تشکیل میں تاخیر کے بعد یہ بحث چھڑ گئی ہے کہ آئین کی عدم موجودگی میں صدر کی قائم کردہ مشاورتی کمیٹی کے پاس حکومت میں شمولیت کے لیے وزراء کے چناو¿ کا اختیار ہے بھی یا نہیں کیونکہ آئین کی موجودہ شکل میں صدر کے پاس لامحدود اختیارات نہیں رہے ہیں۔اسی ضمن میں بعض سیاسی جماعتوں نے نائب صدر کے تقرر پر بھی اعتراض کیا ہے۔ معترضین کا کہنا ہے کہ نائب صدر کا انتخاب بھی عوامی رائے سے اسی طرح ہونا چاہیے جس طرح صدر کا انتخاب ہوتا ہے، اور آئین بھی اسی کی حمایت کرتا ہے۔جبکہ دستوری ماہرین کا کہنا ہے کہ گذشتہ برس فوج کی جانب سے نافذ کردہ عبوری آئین میں نائب صدر کا تقرر صدر کے ذاتی اختیارات میں شامل کیا ہے۔ نیز صدر ہی اپنے نائب کے اختیارات کا تعین کرے گا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ صدر چاہیں تو نائب صدر کے اختیارات کو کسی بھی وقت محدود کر سکتے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -