افسپا کشمیریوں کے سر پر لٹکتی ہوئی تلوار ہے: سید علی گیلانی

افسپا کشمیریوں کے سر پر لٹکتی ہوئی تلوار ہے: سید علی گیلانی

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں بزرگ کشمیری حریت رہنماءسید علی گیلانی نے کالے قانون آرمڈ فورسز سپیشل پاورز ایکٹ کوکشمیریوں پر مسلط تلوار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کالے قانون کے ذریعے بھارتی فوجیوں کو مقبوضہ علاقے میں کشمیریوں کے قتل کا لائسنس حاصل ہے ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ہونے والے ایک بیان میں بانڈی پورہ میں ایک نوجوان کے قتل کے خلاف ہفتہ کو کامیابب ہڑتال کرنے پر کشمیریوں کا شکریہ ادا کیا۔انہوںنے کہاکہ یہ ہڑتال کشمیر کے دورے پر آئے ہوئے بھارتی وزیر دفاع اور فوجی سربراہ کیلئے چشم کشا ہونی چاہےں کہ مقبوضہ علاقے میں تعینات ساڑھے سات لاکھ فوجی بھی کشمیریوں کے جذبہ آزادی کوکمزور نہیں کر سکتے ۔بزرگ رہنماءنے کہا کہ بھارتی فوج کے نئے سربراہ جنرل بکرم سنگھ سمیت متعدد فوجی افسرمقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کے قتل اور دیگر جنگی جرائم میں ملوث ہیں۔انہوںنے کہاکہ جب تک ان افسروںکو عالمی عدالت انصاف کے سامنے جوابدہ نہیں بنایا جاتاکشمیریوں کا قتل عام جاری رہے گا۔سید علی گیلانی نے بھارت نواز سیاست دانوںکوکڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ انہیںکشمیریوں کو درپیش مشکلات کی نہیں بلکہ صرف اپنے اقتدار کی فکر ہے۔ادھر کشمیر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے کشمیری نوجوان کے قتل کے خلاف ہڑتال کی کال کو کامیاب بنانے پرکشمیری عوام کا شکریہ ادا کیا ہے ۔بار کے سیکریٹری جنرل غلام نبی شاہین نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کشمیری عوام نے مقبوضہ علاقے میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف متحد ہو کر جس عزم کااظہار کیا ہے وہ قابل تعریف ہے۔بار ایسوسی ایشن نے متاثرہ کنبے کے ساتھ ہمدردی کااظہار کیا۔

مزید :

عالمی منظر -