اتوار بازاروں میں لوٹ مار عام ، صارفین سراپا احتجاج

اتوار بازاروں میں لوٹ مار عام ، صارفین سراپا احتجاج

لاہور(اپنے نمائندے سے) اتوار بازاروں میں سستی اشیائے خور د و نوش محض خواب بن کر رہ گئیں، اتوار بازار وں میں سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا جا رہاہے ۔شہریوں نے کہا کہ جب سے نگران حکومت آئی ہی انہوں نے سبزیوں ، پھلوں کی قیمتوں میں اضافہ کرا دیا ہے اور شہریوں کا سبزیوں ، پھلوں کی قیمتوں اور معیار میں بہتری لانے کا مطالبہ بھی کیا۔اتوار بازار میں پھلوں کی قیمتوں کے نرخ جو عام آدمی کے پہنچ سے باہر ہیں آج جو پھلوں کے ریٹس ہیں ۔آڑو 80، سیب 164کیلا50، آم 80، گرما 53روپے انگور116 ، امردو 50، انار 106فی کلو مقرر کی ہے جبکہ سبزیوں کے ریٹ آلو41، پیاز27، ٹماٹر84، لہسن 63، بیگن 38، ادرک 154، گاجر 43،حلوہ کدو9، کریلے43، پالک 14، ٹینڈے 58، لیموں دیسی 96، پیٹھا60، پہلیاں 63،گھیا کدو 48،شلجم 43، سبز مارچ 58، شملہ مرچ78، مٹر106فی کلو مقرر کر دی گئی ہے۔ خریداروں نے ڈسپلے پر رکھی سبزیوں اور وزن کم تول کر فروخت کی جانیوالی سبزیوں کے دوہرے معیار پر شکوہ کیااور کہا ہے کہ ان کے اوزان بھی ٹھیک نہیں ہے ان کے اوزان کو بھی چیک کیا جائے۔شادمان اور وحدت کالونی اتوار بازار میں نہ تو پینے کا پانی دستیاب ہے نہ ہی بیٹھنے کا کوئی انتظام ہے۔ وحدت روڈ اتوار بازار میں بھی سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں ملا رجحان پایا گیا۔بڑھتی ہوئی قیمتوں کی وجہ سے شہری پریشان ہیں۔مہنگائی کی گاڑی بدستور چلتی جا رہی ہے اور غریب عوام پستی جا رہی ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ اب مہنگائی ہے تو کیا کریں جینے کے لئے اشیا خورونوش بھی ضروری ہیں۔ عوام کا کہنا ہے کہ کوئی جیے یا مرے نگران حکومت کو کچھ خیال نہیں۔ عوام کا مہنگائی پر رد عمل دیتے ہوئے کہنا تھا کہ کسی بھی بازار میں خریداری کیلئے جائیں تو ہر چیز مہنگی ہی مل رہی ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1