اسلامی نظام معیشت کے نفاذ کے بغیر معیشت کوسنبھالنا ممکن نہیں،عبدالغفارروپڑی

اسلامی نظام معیشت کے نفاذ کے بغیر معیشت کوسنبھالنا ممکن نہیں،عبدالغفارروپڑی

لاہور( پ ر )جماعت اہلحدیث پاکستان کے امیر حافظ عبدالغفارروپڑی اور پنجاب کے امیر حافظ عبدالوحید شاہد روپڑی نے کہا ہے کہ سودی نظام کے خاتمے اور اسلامی نظام معیشت کے نفاذ کے بغیر معیشت کوسنبھالنا ممکن نہیں۔ پاکستان کرہ ارض پر مکہ اور مدینہ کے بعد دنیا کی واحد وہ دوسری اسلامی مملکت ہے جو صرف نظریہ اسلام پر ہی قائم کی گئی پاکستان میں بسنے والی مختلف قومیں ،مختلف زبانیں اور تہذیب و تمدن کے باوجود صرف رشتہ اسلام کے نام پر ایک ہیں اور اسی طرح نظریہ اسلام کو کمزور کرنے سے نظریہ پاکستان ہی کمزور ہوگا انہوں نے حالیہ انجینئرڈ الیکشن کے ذریعے دینی قیادت کو ہرانے اور سیکولر لوگوں کو کامیاب کرانے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے مختلف اداروں میں چھپی یہودی وقادیانی لابی کی کارستانی قرار دیا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز الیکشن کے بعد کی تازہ ترین صورتحال پر جماعتی رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر پروفیسر عبدالمجید، حافظ عبدالوھاب روپڑی مولانا شکیل الرحمن ناصر سمیت دیگگر بھی موجود تھے،انہوں نے مزید کہا کہ ماضی کے حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی بدولت ملکی وسائل سے غیر ملکی کمپنیاں فائدہ اٹھارہی ہیں۔ سابقہ حکمران پارٹیوں نے ملک وقوم کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایاہے۔محض چہروں کے بدلنے کو مثبت تبدیلی قرارنہیں دیاجاسکتا۔اس کے لیے عملی اقدامات ناگزیر ہیں، امریکہ کا پاکستان میں دینی قوتوں کے الیکشن رزلٹ پر بغلیں بجانا اسلامیان پاکستان کے لیے لمحہ فکریہ ہے۔ انتخابات 2018میں الیکشن کمیشن کا کردار تھوڑا اورکسی سلیکشن کمیشن کا کردار زیادہ نظر آرہا ہے ۔گنتی کے وقت پولنگ ایجنٹوں کو دھکے مار کر باہر نکالنا سمجھ سے بالا تر ہے .

مزید : میٹروپولیٹن 4