مہنگے داموں خریدی گئی روئی کی بیلز کے سودے غیر اعلانیہ طور پر منسوخ

مہنگے داموں خریدی گئی روئی کی بیلز کے سودے غیر اعلانیہ طور پر منسوخ

کراچی(این این آئی)روئی کی قیمتوں میں غیر معمولی مندی کے باعث بعض ٹیکسٹائل ملز مالکان نے مہنگے داموں خریدی گئی روئی کی ہزاروں بیلز کے سودے غیر اعلانیہ طور پر منسوخ کر دیئے،کاٹن جنرز کو کروڑوں روپے کا نقصان،پھٹی کی قیمتوں میں بھی ریکارڈ مندی کے باعث کاشتکاروں میں تشویش کی لہر۔چیئرمین کاٹن جنرز فورم احسان الحق نے بتایا کہ حالیہ عام انتخابات کے بعد روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں ریکارڈ کمی کے باعث درآمدی روئی سستی ہونے اور برآمدہونے والی کاٹن پراڈکٹس کے برآمدی رجحان میں متوقع کمی کے باعث صرف تین روز میں روئی کی قیمتوں میں ریکارڈ600روپے فی من مندی واقع ہونے سے اطلاعات کے مطابق بعض ٹیکسٹائل ملز مالکان نے سندھ اور پنجاب سے روئی کی تقریباً12ہزار بیلز کے ایسے سودے غیر اعلانیہ طور پر منسوخ کر دیئے ہیں جو9ہزار 300روپے فی من سے9ہزار600روپے فی من میں خریدے گئے تھے۔انہوں نے بتایا کہ ان سودوں کی منسوخی سے بعض کاٹن جنرز کو کروڑوں روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑے گا جس سے پھٹی کی قیمتیں بھی غیر معمولی طور پر متاثر ہونے سے کاشتکاروں کی فی ایکڑ آمدنی بھی کم ہونے کے خدشات ظاہر کئے جا رہے ہیں۔انہون نے بتایا کہ چین کی جانب سے پاکستان کو دو بلین ڈالر کا قرضہ آسان شرائط پر دینے اور اسلامک ڈیویلپمنٹ بنک(آئی ڈی بی) کی جانب سے پاکستان کو 4.50بلین ڈالر کی تین سالہ آئل فنانسنگ فیسیلٹی دینے کے فیصلے سے آئندہ چند روز کے دوران روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر مزید کم ہونے سے روئی کی قیمتوں میں مزید مندی کا رجحان سامنے آ سکتا ہے۔

انہوں نے بتایا حالیہ عام انتخابات کے بعد سے روئی کی قیمتیں 600روپے فی من مندی کے بعد9ہزار روپے فی من تک گر گئی ہیں اور آج سے شروع ہونے والے نئے کاروباری ہفتے کے دوران ان میں مزید کمی واقع ہو سکتی ہے۔

مزید : کامرس