عمران خان قوم کے سامنے وزارت عظمی کا حلف اٹھانے کے خواہشمند

عمران خان قوم کے سامنے وزارت عظمی کا حلف اٹھانے کے خواہشمند

اسلام آباد(نیو ز ایجنسیاں ،مانیٹرنگ ڈیسک) عمران خان نے عوام کے درمیان حلف اٹھانے کی خواہش کا اظہار کر دیا، چئیر مین پی ٹی آئی کا 11 اگست کو وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھانے کا اعلان، جبکہ نومنتخب قومی اسمبلی کا اجلاس 6سے 11اگست تک بلا ئے جانے کا امکان ہے،تفصیلات کے مطابق وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھانے کے معاملے پر چیئرمین تحریک انصاف نئی مثال قائم کرنے کے خواہشمند ہیں۔ عمران خان نے عوام کے درمیان حلف اٹھانے کی خواہش کا اظہار کر دیا۔تحریک انصاف کی مرکزی قیادت نے عمران خان کی جانب سے عوام کے درمیان حلف اٹھانے کی تجویز کی حمایت کردی۔ عمران خان ڈی چوک یا پریڈ گراؤنڈ پر حلف اٹھا سکتے ہیں تاہم اس حوالے سے دیگر آپشنز بھی زیر غور ہیں۔ عمران خان کے حلف اٹھانے کا معاملہ سیکیورٹی کلیئرنس سے مشروط ہوگا، تاہم اس حوالے سے حتمی فیصلہ فیصلہ ایک سے دو روز میں ہوگا۔ یاد رہے سابق وزیراعظم ذوالفقارعلی بھٹو بھی عوامی انداز میں حلف اٹھاچکے ہیں۔تحریک انصاف کے رہنما نعیم الحق نے سماجی رابطہ سائٹ ٹوئٹر اپنے بیان میں بتایا کہ پارٹی چیئرمین عمران خان نئی مثال قائم کرنے کے خواہشمند ہیں اور عوام کے درمیان وزیراعظم کا حلف اٹھانا چاہتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان چاہتے ہیں کہ جب وہ وزیراعظم کا حلف اٹھا رہے ہوں تو انہیں ہزاروں افراد دیکھ سکیں۔علاوہ ازیں عمران خان نے 11 اگست کو وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھانے کا اعلان کر دیا اور کہا ہے کہ وزیرا علیٰ خیبر پختو نخواہ کا نام فائنل کر چکا ہوں آئندہ 48 گھنٹوں میں اعلان کر دوں گا لیکن کسی کی بلیک میلنگ میں نہیں آؤں گا۔ نجی ٹی وی رپورٹ کے مطابق عمران خان نے خیبر پختو نخو اسے نو منتخب اراکین قومی اور صوبائی اسمبلی سے گفتگو میں کیا ہے جنہوں نے بنی گالا میں ان سے ملاقات کی ہے ۔ دریں اثنانومنتخب قومی اسمبلی کا اجلاس 6سے 11اگست تک بلائے جانے کا امکان ہے،پاکستان تحریک انصاف 14اگست سے قبل حکومت سازی کا عمل مکمل کرنا چاہتی ہے،نو منتخب قومی اسمبلی کے پہلے اجلاس میں سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کامیاب ارکان سے حلف لیں گے جبکہ حلف کے بعد نئے سپیکر قومی اسمبلی اور ڈپٹی اسپیکرکا انتخاب کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق عام انتخابات 2018میں تحریک انصاف(پی ٹی آئی)کی کامیابی کے بعد نو منتخب قومی اسمبلی کا اجلاس 6اگست سے 11اگست تک بلائے جانے کا امکان ہے۔ ذرائع کے مطابق تحریک انصاف 14اگست سے قبل حکومت سازی کا عمل مکمل کرنا چاہتی ہے۔پی ٹی آئی 14اگست کو یوم آزادی کی تقریب نئے وزیراعظم کے ذریعے کرانے کی خواہش مند ہے۔نو منتخب قومی اسمبلی کے پہلے اجلاس میں سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کامیاب ارکان سے حلف لیں گے جبکہ حلف کے بعد نئے سپیکر قومی اسمبلی اور ڈپٹی اسپیکرکا انتخاب کیا جائے گا۔واضح رہے کہ ملکی آئین کے تحت پولنگ ڈے سے 21دن کے اندر قومی اسمبلی کا اجلاس بلانا ضروری ہے۔

خواہشمند

مزید : صفحہ اول