ایم کیو ایم کا تحریک انصاف کی حکومت میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ

ایم کیو ایم کا تحریک انصاف کی حکومت میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک، این این آئی)ایم کیو ایم پاکستان نے تحریک انصاف حکومت میں شامل نہ ہونے کا اعلان کر دیا،دوسری طرف تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کے درمیان رابطے کار کے طور پر ڈاکٹر عشرت العباد خان کا نام سامنے آگیا،تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان نے تحریک انصاف حکومت میں شامل نہ ہونے کا اعلان کر دیاہے۔ رہنما متحدہ فیصل سبزواری کا کہنا ہے کہ فاروق ستار نے آل پارٹیز کانفرنس میں ایم کیو ایم کا موقف اپنایا۔ایم کیو ایم پاکستان متوقع طور پر برسراقتدار آنے والی پارٹی تحریک انصاف کے ساتھ اتحاد نہیں کرے گی۔ ان خیالات کا اظہار ایم کیو ایم کے رہنما فیصل سبزواری نے کیا۔ وہ دوبارہ گنتی کی درخواست کیلئے جلد اسلام آباد جائیں گے۔ علاوہ ازیں تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کے درمیان رابطے کار کے طور پر ڈاکٹر عشرت العباد خان کا نام سامنے آگیاہے۔پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی اور سابق گورنرسندھ ڈاکٹرعشرت العبادخان کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہواہے،شاہ محمود قریشی کے مطابق عشرت العباد کے ذریعے ایم کیو ایم سے بات چیت چل رہی ہے۔ سابق گورنر سندھ کے مطابق تحریک انصاف نے کھلے دل کا مظاہرہ کیا، خالد مقبول اور دوستوں نے مثبت اشارے دیئے ہیں۔ کراچی کی سیاست میں سابق گورنرڈاکٹرعشرت العبادخان کی ایک بار پھرانٹری ہوئی ہے۔پی ٹی آئی کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی اور سابق گورنرسندھ ڈاکٹر عشرت العباد کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں متحدہ کو ساتھ لے کرچلنے کے عزم کا ظہار کیا گیا۔ڈاکٹرعشرت العباد نے 2018 کے عام انتخابات میں کامیابی پرعمران خان اور تحریک انصاف کو مبارکباد دی۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کے درمیان بہترین ورکنگ ریلیشن کے لیے کردار ادا کروں گا۔ کراچی کی بہتری کے بغیر ملک اور معیشت آگے نہیں بڑھ سکتی، شہر سے ووٹ لینے والوں کو بھی اہمیت دینا ہوگی، انہیں ساتھ لے کر آگے بڑھنا ہوگا۔

عدم شمولیت کا فیصلہ

مزید : صفحہ اول