انتخابی مہم کے بغیر پی ٹی آئی کراچی میں کیسے کامیاب ہو گئی؟ سعید غنی

انتخابی مہم کے بغیر پی ٹی آئی کراچی میں کیسے کامیاب ہو گئی؟ سعید غنی

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے الیکشن کمیشن سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی سمیت ملک بھر میں انتخابات شفاف نہیں ہوئے، تمام جماعتوں نے الزام لگایا کہ ان کے پولنگ ایجنٹس کو باہر نکالا گیا۔پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے شکایتوں کے انبار لگاتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی میں بڑی دھاندلی کی گئی، طے شدہ منصوبے کے تحت ہمیں ہرایا گیا۔بلاول ہاؤس کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا کہ کراچی سمیت ملک بھر میں الیکشن صاف و شفاف نہیں ہوئے، عام انتخابات کی شفافیت پر الیکشن کمیشن ڈھٹائی پر اڑا ہوا ہے، ایک کمرے میں دو دو پولنگ بوتھ بنائے گئے۔انہوں نے مزید کہا کہ کل کیسے قیوم آباد سے جلے ہوئے بیلٹ پیپر ملے، اکثر بیلٹ پیپر پر تیر کا نشان تھا۔یاد رہے کراچی میں بہتر انتخابی نتائج حاصل نہ ہونے پر دل برداشتہ ہو کر پیپلز پارٹی کراچی ڈویڑن کے صدر سعید غنی گزشتہ روز مستعفی ہو گئے۔ایک قومی روزنامہ مطابق انہوں نے اپنا استعفیٰ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو ارسال کر دیا ہے، پارٹی کے اہم رہنما نے سعید غنی کے استعفے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ پی پی پی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے ان کا استعفیٰ منظور نہیں کیا۔پیپلز پارٹی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ سعید غنی انتخابی نتائج سے دل برداشتہ ہو گئے تھے۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کراچی ڈویڑن کی موثر عوامی رابطہ مہم نہ ہونے کے باعث لیاری میں پیپلز پارٹی کو طویل عرصے کے بعد ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا ہے۔

سعید غنی

مزید : صفحہ آخر