مینڈیٹ چرایا گیا ، تحفظات کو دور کیا جائے،اسد اﷲ بھٹو

مینڈیٹ چرایا گیا ، تحفظات کو دور کیا جائے،اسد اﷲ بھٹو

کراچی(اسٹاف رپورٹر )متحدہ مجلس عمل کے مرکزی رہنما وسابق ایم این اے اسداللہ بھٹونے کہا ہے کہااسلام اور پاکستان دونوں ایک دوسرے کے ساتھ لازم وملزوم ہیں، ملک کے اسلامی تشخص کو ختم کرنے کی کوئی بھی سازش کامیاب نہیں ہوگی، عوام نے جس کو مینڈیٹ دیا اس کا احترام ہے مگر جن کا مینڈیٹ چرایا گیا ان کے تحفظات کو بھی دور کیا جانا چاہئے،بڑی سیاسی جماعتوں کی جانب سے انتخابات میں بے ضابطگیوں ،کراچی کے کچرا کنڈیوں سے بیلٹ پیپرز کا ملنا اور چیف الیکشن کمشنر کے استعفیٰ کا مطالبہ انتخابات کی شفافیت والے دعوں کی سراسر نفی ہے۔انہوں نے آج ایک بیان میں مزید کہا کہ ہم ملک میں شریعت کے نفاذ ،اصلاح معاشرہ اور عوام کے فلاح وبہبود کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے،ملک میں دینی جماعتوں کو دیوار سے لگانے اور لبرل ،روشن خیال قوتوں کو طاقتور بنانے کی سازشوں کی شدید مزاحمت کریں گے، دیر سے کراچی تک تمام سیاسی جماعتوں نے حالیہ انتخابات کو متنازعہ قرار دیا ہے جو کہ جمہوری سسٹم کیلئے باعث تشویش ہے ،طاقتور ادارے اور عدالت اعظمیٰ کو فوری طور پر متاثرہ فریقوں کے خدشات کو دور اور الیکشن کمیشن اپنی نااہلی پر قوم سے معافی مانگے۔جماعت اسلامی اور متحدہ مجلس عمل ملک کے دینی تشخص، دستور میں موجود اسلامی دفعات اور ختم نبوت قانون سمیت تمام اسلامی دفعات کا بھرپور دفاع کرے گی، اگر کوئی طاقت یہ سمجھتی ہے کہ دینی قوتوں اور دینی سیاسی جماعتوں کے قائدین کو پارلیمنٹ سے دور رکھ کر وہ اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب ہوجائیں گے تو یہ ان کی خام خیالی ہوگی، ہم کسی سے محاذ آرائی اور ملک میں انتشار نہیں چاہتے ہیں لیکن اسلام اور ملک کے اسلامی تشخص پر کسی صورت آنچ نہیں آنے دیں گے۔

مزید : علاقائی