کمرہ سٹریچر ، کھلے آسمان تلے چار پائیوں پر پوسٹمارٹم ، ورثا کا احتجاج

کمرہ سٹریچر ، کھلے آسمان تلے چار پائیوں پر پوسٹمارٹم ، ورثا کا احتجاج

خانقاہ شریف (نمائندہ پاکستان )رول ہیلتھ سینٹر خانقاہ شریف (سمہ سٹہ)میں پوسٹ مارٹم کا کمرہ اور(آپریشن کے اوزار) نہیں ہیں جس سے ڈاکٹر پوسٹ مارٹم خواتین کے ہوں یا مردوں کے کھلے آسمان کے نیچے چارپائیوں پر چادریں اوڑھ کر کے سامنے کرتے ہیں جس پر ورثا نے شدید احتجاج کیاگذشتہ روز بھی ڈکیٹی کے دوران قتل ہونے والے دین محمد کاپوسٹ مارٹم سینکڑوں لوگوں کے سامنے چارپائی پرکیا گیا اس بارے میں جب ڈاکٹر شہباز سے بات کی تو انہوں نے کہا کمرہ بنواکر دینا پنجاب حکومت کا کام ہے ہمارے پاس پوسٹ مارٹم والی سٹریچرخراب تھی اس لیے بیڈ پرکیاہے یہ بھی سٹریچر ہے اور چادراوڑھی (بقیہ نمبر44صفحہ7پر )

ہوئی تھی جہاں تک ورثا کے سامنے کی بات ہے تو ورثا کو بھی پتہ ہوتا ہے کہ پوسٹ مارٹم کیسے ہوتا ہے وہ کمرے میں ہویاباہرباقی اوزار پرانے نہیں ہوتے ذرائع نے بتایا کہ رول ہیلتھ سنٹر میں مریضوں کو ادویات فراہم کی جائیں جس کی وجہ سے غریب مستحق مریض پرائیوٹ ہسپتالوں میں جانے پر مجبور ہیں لوگوں نے فوری کارروائی کامطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر