انٹربینک میں 4 سال کے بعدڈالرکی قدر میں 5 روپے کمی

انٹربینک میں 4 سال کے بعدڈالرکی قدر میں 5 روپے کمی
انٹربینک میں 4 سال کے بعدڈالرکی قدر میں 5 روپے کمی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ملک میں حالیہ عام انتخابات کے بعد ڈالر کی قدر میں کمی ہونا شروع ہو گئی ہے ۔انٹر بنک مارکیٹ میں 4 سال کے بعدڈالرکی قدرمیں اتنی زیادہ کمی دیکھی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتہ کے آغاز میں ہی انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں مزید 5 روپے 36 پیسے کی بڑی کمی واقع ہوئی ہے۔ جس کے بعد ڈالر 122 روپے 50 پیسے میں فروخت ہو رہا ہے۔اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر کی قیمت میں کمی واقع ہوئی اور اوپن مارکیٹ میں ڈالر 4روپے سستا ہوکر 121 روپے 20 پیسے کی سطح پر ٹریڈ ہو رہا ہے ۔

جبکہ دوسری جانب پاکستان سٹاک مارکیٹ میں بھی الیکشن 2018 کے بعد تیزی کا رجحان جاری ہے اور کاروباری ہفتہ کے پہلے ہی روز کاروبار کا مثبت رجحان دیکھا گیا اور 100انڈیکس 43ہزار کی سطح عبور کر گیا ہے ۔

واضح رہے کہ گزشتہ کئی روز سے ڈالر کی قدر میں کمی جاری ہے اور اس میں مزید کمی کی توقع کی جارہی ہے ۔

مزید : بزنس /علاقائی /سندھ /کراچی