سیاسی افراد کی خواہش پرسرکاری وکلاء کی بھرتی حکومت کیلئے نقصان دہ: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

  سیاسی افراد کی خواہش پرسرکاری وکلاء کی بھرتی حکومت کیلئے نقصان دہ: چیف ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے درست معاونت نہ کرنے پر سرکاری وکیل کی غفلت کا معاملہ اٹارنی جنرل اور سیکرٹری قانون کو بھجوانے کا اپنافیصلہ واپس لے لیا،ڈپٹی اٹارنی جنرل میاں اسرارالہٰی کی جانب سے فیصلہ واپس لینے کے لئے درخواست دائر کی گئی تھی،دوران سماعت فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ سیاسی افراد کی خواہش پر سرکاری وکلا ء کی بھرتی حکومت کے لئے بھی نقصان دہ ہے،چیف جسٹس نے اٹارنی جنرل آفس کی غفلت پر عدالت میں شعر بھی سنایاکہ آپ ہی اپنی اداؤں پرذرا غور کریں،ہم عرض کریں گے توشکایت ہوگی،فاضل جج نے مزید ریمارکس دیئے کہ حکومت خود دیکھے کہ کیسے سرکاری وکیل رکھے ہوئے ہیں؟ایسے سرکاری وکیل ہیں جو تیاری کے ساتھ عدالت میں نہیں آتے،انہیں یہی نہیں پتہ کہ کیس نہیں دیکھا تو پیش نہ ہوں، اکثر سرکاری وکلا ء کی شکایات آرہی ہیں،سرکاری وکیل عدالت میں تو مکمل تیاری کے ساتھ پیش ہوں۔

نقصان دہ

مزید :

صفحہ آخر -