کورونا، بیرون ملک سے واپس آنے والے پاکستانیوں کو قرضے دیئے جائیں گے، پاکستان اور جرمنی میں معاہدہ

  کورونا، بیرون ملک سے واپس آنے والے پاکستانیوں کو قرضے دیئے جائیں گے، ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیترنگ ڈیسک) کورونا کے باعث بیرون ملک سے واپس آنے والے پاکستانیوں کی بحالی کیلیے پاکستان اور جرمنی کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہو گئے۔ اسلام آباد میں بیرون ملک سے آنے والے پاکستانیوں کی دوبارہ بحالی کے لیے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب ہوئی جس میں وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانی ذوالفقار بخاری اور جرمن سفیر نے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیے۔مفاہمتی یادداشت کے تحت جرمنی اوورسیز پاکستانیوں کی بحالی کے لیے 3 ملین یورو امداد دے گا اور بیرون ملک پاکستانیوں کے لیے قائم سہولتی مرکز کو تکنیکی معاونت دی جائے گی۔ اس موقع پر جرمن سفیر کا کہنا تھا کہ جرمنی پاکستانیوں کو دوبارہ ملازمتوں کے حصول میں مدد دے گا، پاکستانیوں کی تکنیکی ٹریننگ میں جرمنی مدد کرے گا اور نوجوانوں کو ہوٹلنگ اور سیاحت کے شعبے میں ٹریننگ دی جائے گی جب کہ انہیں جرمن زبان کا کورس بھی کروایا جائے گا۔معاون خصوصی ذلفی بخاری کا کہنا تھا کہ کورونا کی وجہ سے ملازمتیں کھونے والے پاکستانیوں کو چھوٹے کاروباری قرضے فراہم کیے جائیں گے۔پاکستانیوں کی بحالی کے لیے یہ معاہدہ انتہائی اہم ہے،جرمنی کی 3 ملین یوروز کی امداد تکنیکی ٹریننگ اور کاروبار میں آسانی کے لیے استعمال ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ کورونا کی وجہ سے ملازمتیں کھونے والے پاکستانیوں کی مدد کی جائے گی اور بیرون ملک سے آنے والوں کو چھوٹے کاروباری قرضے بھی فراہم کیے جائیں گے۔

جرمن معاہدہ

مزید :

صفحہ آخر -