ننھی مدیحہ قتل کیس میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے پر ڈی پی او ہنگو سمیت 10پولیس افسران کو نقد انعامات

  ننھی مدیحہ قتل کیس میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے پر ڈی پی او ہنگو سمیت ...

  

ہنگو(بیورورپورٹ) ریجنل پولیس آفیسر کوہاٹ طیب حفیظ چیمہ نے ننھی مدیحہ کی عالمی شہرت یافتہ قتل کیس میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے پر ڈی پی او ہنگو سمیت 10پولیس افسران کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا ہے۔اس حوالے سے ریجن پولیس آفس کوہاٹ میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جسمیں ڈی پی او ہنگو شاہد احمد خان، پی ایس او ٹو ڈی پی او راضی گل اور دیگر پولیس افسران نے شرکت کی۔تقریب کے دوران ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی طیب حفیظ چیمہ نے تھانہ دوآبہ ہنگو سے ملحقہ علاقہ درسمند میں زیادتی کی کوشش کے دوران اپنے چچا زاد کے ہاتھوں قتل ہونیوالی 7سالہ معصوم بچی مدیحہ کے مشہور قتل کیس میں اہم کامیابیاں حاصل کرنے کے اعتراف میں ڈی پی او ہنگو شاہد احمد خان،ڈی ایس پی سٹی ہنگو حافظ نذیر خان،ایس ایچ اوتھانہ دوآبہ مجاہد حسین،تفتیشی افسر انسپکٹر علی احمد، سب انسپکٹر نعمت خان،اسسٹنٹ سب انسپکٹر واجب عالم،ہیڈ کانسٹیبل قاصد علی،ہیڈ کانسٹیبل ابراہیم، کانسٹیبل ظاہر شاہ اور نصیب اللہ کو نقد انعامات اور تعریفی اسناد سے نواز کر انکی بھر پور حوصلہ افزائی کی۔خیال رہے کہ سات سالہ مدیحہ کو 16فروری کی شام انکے چچا زاد الیاس نے گاؤں درسمند کے ایک ویرانے میں لے جاکر زیادتی کی کوشش کے دوران بچی کی چیخ و پکار پرانہیں گولی مار کر موت کے گھاٹ اتار دیا تھا اور بچی کی قتل کے اس کیس میں پشاور ہائی کورٹ نے از خود نوٹس لیا تھا اور انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی اور چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا ڈاکٹر کاظم نیاز سمیت وفاقی و صوبائی وزراء اوردیگر اہم شخصیات نے بھی بچی کے گھر جاکر انکے لواحقین سے ملاقاتیں کیں اور مقامی پولیس کو ملوث ملزمان کی گرفتاری اور کیس کو منطقی انجام تک پہنچانے میں خصوصی دلچسپی لینے کی تاکید کی جبکہ پولیس ٹیم نے شبانہ روز محنت اور جدید طرز تفتیش سے استفادہ حاصل کرتے ہوئے صرف 48گھنٹے کی قلیل وقت میں نہ صرف اس لرزہ خیز قتل کیس میں ملوث ملزم الیاس کا سراغ لگا کر انہیں گرفتار کیا بلکہ ملزم کی نشاندہی پر آلہ قتل پستول بھی برآمد کرلی اور مزید تفتیش اور عدالتی کاروائی کے دوران ملزم کے اعتراف جرم کے حوالے سے بیانات بھی ریکارڈ کرکے اطمینان بخش قانونی کاروائی عمل میں لائی اور پولیس کی اب تک کی قانونی کاروائی پر عدالت نے بھی اطمینان کا اظہار کرکے ملزم کو جیل میں قید رکھنے کے احکامات جاری کئے ہیں جو کہ پولیس کی پیشہ ورانہ کمٹمنٹ کی اعلیٰ مثال ہے۔علاوہ ازیں ننھی مدیحہ قتل کے اس کیس کو عالمی سطح پر بھی کافی شہرت حاصل ہوئی اور قلیل عرصے میں مکمل طور پر اندھے قتل میں ملوث ملزم کی گرفتاری اور کیس کو کامیابی سے ہمکنار کرنے کی پولیس کاروائی کو عوامی و سماجی حلقوں میں بے حد پزیرائی ملی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈی آئی جی کوہاٹ ریجن طیب حفیظ چیمہ نے انعام یافتہ پولیس افسران کی بہترین پیشہ ورانہ کارکردگی کی تعریف کی اور انہیں ہدایت کی کہ وہ اپنی کارکردگی میں مزید نکھار پیدا کرکے اپنی تمام تر توجہ لوگوں کی جان ومال اور عزت و آبرو کے تحفظ اور قیام امن وانسداد جرائم پر مرکوز رکھیں تاکہ محکمے کا وقارمزید بلند اور پولیس پر عوام کا اعتماد بحال رہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -