دینی مدارس کو میلی آنکھ سے دیکھنے والوں کی آنکھیں نوچ لینگے: مولانا عطاء الرحمان

دینی مدارس کو میلی آنکھ سے دیکھنے والوں کی آنکھیں نوچ لینگے: مولانا عطاء ...

  

تخت بھائی (تحصیل رپورٹر) جمعیت علماء اسلا م کے صوبائی امیر سینیٹر مولانا عطا الرحما ن نے کہاہے کہ دینی مدارس کو میلی آنکھ سے دیکھنے والوں کی آنکھیں نوچ لیں گے۔امریکہ اوراسکے حواری دینی مدارس کو ختم کرنا چاہتے ہیں لیکن انہیں کسی بھی صورت کامیابی نہیں ملے گی۔ملک میں 27ہزار مدارس میں ساڑھے پانچ لاکھ طلباء علم کی پیاس بجھا رہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دارالعلوم شیرگڑھ میں بجلی کی شارٹ سرکٹ سے لگنے والی آگ سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لینے کے موقع پر کیا۔دارالعلوم شیرگڑھ کے مہتمم مولانا محمد قاسم،ضلعی جنرل سیکرٹری مولانا امانت شاہ حقانی،سیکرٹری اطلاعات مولانا قیصر الدین اور مفتی سلیم حلیمی بھی انکے ہمراہ تھے۔سینیٹر مولانا عطا الرحمان نے آگ سے ہونے والے نقصانات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ دار العلوم شیرگڑھ ایک عظیم درسگاہ ہے اور یہاں سے فارغ التحصیل طلباء ملک کے کونے کونے میں دین اسلام کے اشاعت میں سرگرم عمل ہے۔انہوں نے کہاکہ ملک کو ایک اناڑی کے ہاتھوں تباہ کر دیا گیا ہے۔ملکی معیشت روز بروز گرتی جارہی ہے اور وزیر اعظم اور اسکے حواری ہاتھ پے ہاتھ درے بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہاکہ صوبوں کو پہلے دن سے حقوق نہیں دیے جارہے ہیں اور اب اٹھارویں ترمیم کو ختم کر کے صوبوں سے انکا حق چھینا جارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ مہنگائی اتنی بڑھ گئی ہے کہ عوام ایک وقت کی روٹی کے لئے ترس رہے ہیں لیکن نام نہاد حکمرانوں نے چھپ سادھ لی ہے۔عمران خان نے ملک کو ستر سال پیچھے دھکیل دیا ہے اور اب کوئی بھی حکمرانی کے لئے تیار نہیں ہے۔جی ڈی پی 0.4فیصد سے بھی کم رہ گئی ہے۔آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک سے اربوں ڈالرز کے قرضے لینے کے باوجود بھی معیشت سنبھل نہیں رہی ہے۔انہوں نے کہاکہ عید الاضحی کے بعد حکومت کے خلاف فیصلہ کن تحریک کا آغاز کررہے ہیں اور بہت جلد عمران خان کو گھر بھیج کر پاکستان کو بچائیں گے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -