قانون سازی کی راہ میں اپوزیشن رکاوٹ  نہیں بلکہ ۔۔۔۔مسلم لیگ ن کے رہنما رانا تنویر حسین نے وزیر اعظم پر سنگین الزام عائد کردیا  

قانون سازی کی راہ میں اپوزیشن رکاوٹ  نہیں بلکہ ۔۔۔۔مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ...
قانون سازی کی راہ میں اپوزیشن رکاوٹ  نہیں بلکہ ۔۔۔۔مسلم لیگ ن کے رہنما رانا تنویر حسین نے وزیر اعظم پر سنگین الزام عائد کردیا  

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما اور قومی اسمبلی میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے چیئرمین رانا تنویر حسین نے کہا ہے کہ قانون سازی کی راہ میں رکاوٹ اپوزیشن نہیں،وزیر اعظم کا جارحانہ طرز عمل ہے، وزیر اعظم اور ان کی ٹیم گزشتہ دو سال سے اپوزیشن کو گالیاں دے رہی ہے جبکہ اپوزیشن نے دہشت گردی کے خاتمہ، کرونا وائرس کی روک تھام اور کشمیر ایشو پر حکومت کا غیر مشرو ط ساتھ دیا ہے ،اس تعاون کے باوجود حکومت مسلسل اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگانے کیلئے اوچھے منفی ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا تنویر حسین کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگانے کے لئے حکومت  نیب کو ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہی ہے،نیب قوانین میں ترمیم نہیں اس کا خاتمہ ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ میاں شہباز شریف سے بلاول بھٹو زرداری اور مولانا فضل الرحمن کی ملاقاتوں سے حکومت مخالف تحریک تیز کرنے میں بڑی مدد ملے گی، عید کے بعد اے پی سی میں اپوزیشن مشترکہ لائحہ عمل کا اعلان کرے گی۔ رانا تنویر حسین نے کہا کہ عید کے موقع پر لاک ڈاؤن چھوٹے تاجروں کے معاشی قتل کے مترادف ہے، تاجروں پر لاٹھی چارج تشدد اور مقدمات کا اندراج قابل مذمت ہے،معاونین خصوصی کے استعفیٰ حکومتی اقتدار کے ایوانوں میں دراڑیں پڑنے کی بنیاد ہے، دوہری شہریت کے معاملے پر حکومت نے دوہرا معیار قائم کررکھا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کے معاملہ پر حکومت نے ایک بار پھر اپنی نااہلی، ناتجربہ کاری اور نالائقی کا ثبوت دیا ہے، قومی حمیت کے اس معاملہ پر پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینا ضروری تھا،اپوزیشن نے پارلیمنٹ کو ملک و قوم کے وسیع تر مفاد کی خاطر استعمال کیا ہے، یہ ایوان ہی 22 کروڑ عوام کا نمائندہ ہے ،ہم نے سیاست سڑکوں کی بجائے پارلیمانی روایات کے مطابق اسمبلی کے اندر کھڑے ہو کر کی ہے، اس پر بھی وزیر اعظم کی تنقید انکی غیر جمہوری سوچ کی عکاسی ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -