ہاکی کھلاڑیوں کی اکثریت فٹنس ثابت کرنے میں ناکام 

    ہاکی کھلاڑیوں کی اکثریت فٹنس ثابت کرنے میں ناکام 

  

 لاہور(سپورٹس رپورٹر)پاکستان ہاکی کی زبوں حالی کی اہم وجہ سامنے آگئی، قومی کھلاڑیوں کی اکثریت کا فٹنس لیول غیر معیاری نکل آیا۔ہاکی کھلاڑیوں کے فٹنس مسائل سینٹرل کنٹریکٹ کی راہ میں رکاوٹ بن گئے۔ٹیم مینجمنٹ کی مطلوبہ فٹنس پر کوئی بھی پورا نہ اترسکا، 12کھلاڑی طے شدہ بنچ مارک کے قریب قریب ضرور پہنچ پائے۔ ٹیم مینجمنٹ اپنی رپورٹ اور سفارشات پی ایچ ایف کو  آج جمع کروائے گی۔فٹنس مسائل سامنے آنے کے بعد کھلاڑیوں کے سینٹرل کانٹریکٹ خطرے میں پڑگئے ہیں، کیونکہ فیڈریشن نے سینٹرل کانٹریکٹ فٹنس سے مشروط کررکھا ہے۔ذرائع کے مطابق کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل معیار کی فٹنس پانے کے لیے تین سے چارماہ کا وقت لگ سکتا ہے۔رپورٹ کی بنیاد پر سینٹرل کنٹریکٹ دینے کا فیصلہ اگلے ہفتے ہوگا،پاکستان ہاکی فیڈریشن نے فٹنس ٹرائلز میں 32کھلاڑیوں کو مدعو کیا تھا جس میں سے20 کھلاڑیوں کو اے، بی اور سی کیٹگری میں 50، 40اور30 ہزار روپے ماہانہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -