وزیر ریلوے، محکمے کے حکام غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہ میں رکاوٹ

وزیر ریلوے، محکمے کے حکام غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہ میں رکاوٹ

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم کے غیرملکی کمپنیوں کے پاکستان میں سرمایہ کاری کے وژن کی تکمیل میں وزیرریلوے اور دیگر ریلوے حکام آڑے آگئے، گزشتہ سال ٹینڈر جیتنے والی قطری کمپنی ’الزاہد‘ کے کام میں نہ صرف روڑے اٹکائے گئے بلکہ وفاقی وزیر کے مبینہ فرنٹ مین کولاہور ڈرائی پورٹ کا ٹھیکہ دینے کی بھی ناکام کوشش کی گئی۔ اس حوالے سے معروف اینکر پرسن کامران شاہد نے اپنے پروگرام میں انکشاف کیا کہ گزشتہ سال حکومت نے ازاخیل ڈرائی پورٹ کے ٹھیکے کے لیے بڈنگ پراسیس کے ذریعے ایک کمپنی کو تین سال کا کنٹریکٹ دیا لیکن پھر اچانک حکومت نے نیا ٹینڈر جاری کردیا جو قوانین کی خلاف ورزی ہے کیونکہ تین سال تک نیا ٹینڈر جاری نہیں کیا جاسکتا۔کامران شاہد نے بتا یا کہ مذکورہ کمپنی سے ایک کروڑ سے زائد کی رقم بھی وصول کی گئی دوسری طرف مبینہ طور پر لاہور کی ایک من پسند شخصیت کو ڈرائی پورٹ کا ٹھیکہ دیا گیا جس پر میڈ یا میں شور مچنے کے بعد مجبوراً ٹھیکہ واپس لینا پڑا۔اینکر پرسن نے مطالبہ کیا کہ اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہیے اور وزیر ریلوے اعظم سواتی کو بھی جواب دہ ہونا چاہیے۔ 

ریلوے ٹھیکہ

مزید :

صفحہ آخر -