پنجاب میں غیرقانونی اور غیررجسٹرڈ بلڈ بنک ، ڈاکٹریاسمین راشد نے خبر دارکردیا

پنجاب میں غیرقانونی اور غیررجسٹرڈ بلڈ بنک ، ڈاکٹریاسمین راشد نے خبر ...
 پنجاب میں غیرقانونی اور غیررجسٹرڈ بلڈ بنک ، ڈاکٹریاسمین راشد نے خبر دارکردیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنےخبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب میں اب کوئی بھی غیرقانونی یاغیررجسٹرڈ بلڈ بنک نہیں چل سکتا،پنجاب کے تمام بلڈ بنکس کی مانیٹرنگ کی جارہی ہے،آئندہ غیررجسٹرڈ بلڈ بنکس کو وارننگ نہیں بلکہ مکمل بندکردیاجائے گا،پنجاب کے بلڈ بنکس میں خون کی محفوظ ترسیل کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں،تمام سرکاری و نجی بلڈ بنکس کے عملہ کی تربیت کی جائیگی۔

اپرمال پر پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کے نئے دفترکافتتاح کے موقع پر ڈاکٹریاسمین راشدنے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کا نیادفتردیکھ کربہت خوشی ہورہی ہے،پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کودرست سمت پرلانے پرڈاکٹرشہنازنسیم اور ان کے عملہ کو شاباش اور مبارکباددیتی ہوں ،ڈاکٹرشہنازنسیم نے محنت سے پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کواپنے پاؤں پرکھڑاکیاہے،آج پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کو نئے دفترکاافتتاح کرکے ازسرنوفعال کیاگیاہے،پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی میں شکایات کے ازالہ کیلئے باقاعدہ شکایت سیل قائم کیاگیاہے، پنجاب کے تمام سرکاری ٹیچنگ ہسپتالوں میں بلڈ بنکس کی ذمہ داری انتظامیہ کے پاس ہوگی۔

ڈاکٹریاسمین راشد نے کہا کہ نجی سیکٹرمیں نئے اور جدیدبلڈ بنکس دیکھناچاہتے ہیں،پنجاب ہیلتھ فاؤنڈیشن کے ذریعے نجی سیکٹر کو زیادہ سے زیادہ پروموٹ کرنے کی کوشش کررہے ہیں، پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی نے ابھی تک 1097بلڈ بنکس کی انسپکشن کی ہے،بلڈ بنکس میں محفوظ خون کی ترسیل میں کسی قسم کاسمجھوتہ نہیں کرسکتے،کسی بھی مریض کے علاج میں خون بنیادی حیثیت رکھتاہے،انشاء اللہ بلڈ بنکس کو بین الاقوامی معیارکے مطابق چلائینگے۔

صوبائی وزیرصحت نے کہا کہ اگلے 6ماہ کے دوران تمام بلڈ بنکس کو رجسٹرکرنے کی کوشش کی جائیگی،پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی میں ایس این ایزکے مطابق عملہ بھرتی کیاگیاہے، پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کو تمام درکار وسائل مہیاکئے جارہے ہیں،عوام سے رجسٹرڈ بلڈ بنکس کے علاوہ کسی بھی غیررجسٹرڈ بلڈ بنک سے خون نہ لینے کی اپیل کرتے ہیں۔

    صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشدنے  کہا کہ محکمہ صحت کے کسی بھی شعبہ میں کرپشن برداشت نہیں کی جائیگی،بدعنوانی کی شکایت پرفوری تحقیقات کی جاتی ہیں، پنجاب کے ٹیچنگ ہسپتالوں کی پیتھالوجی لیبزمیں تمام سہولیات دستیاب ہیں،آج ہم نے پنجاب بلڈ ٹرانفیوژن اتھارٹی کو ایک کمرہ سے باہرنکال کرباقاعدہ دفتر میں منتقل کردیاہے،ٹیچنگ ہسپتالوں کے زیرانتظام بلڈ بنکس بہت اچھے طریقے سے چل رہے ہیں، پنجاب ہیلتھ فاؤنڈیشن کے ذریعے نجی سیکٹر کوبلڈ بنکس قائم کرنے کیلئے لون دیاجارہاہے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ویکسی نیشن کی بہت بڑی مہم چلارہے ہیں،ہمارے مخالفین نے بھی کورونا پر قابوپانے کیلئے پنجاب کے اقدامات کو سراہاہے،گذشتہ روز 5لاکھ سے زائدافرادکی ویکسی نیشن کیلئے محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیرکوشاباش دیتی ہوں،گذشتہ6ماہ سے پنجاب میں دن رات ویکسی نیشن جاری ہے،این سی اوسی نے پنجاب میں ویکسی نیشن کا ہدف حاصل کرنے پر باقاعدہ سراہاہے۔

صوبائی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ پنجاب میں اس وقت 70فیصدڈیلٹاویریئنٹ موجودہے، ڈیلٹا ویریئنٹ کی شدت اور پھیلاؤ بھی زیادہ ہے،عوام سےکوروناوائرس سےبچنےکیلئےماسک سمیت تمام احتیاطی تدابیرپرعملدرآمد کرنے کی اپیل کرتے ہیں،پنجاب میں روزانہ 17ہزار سے زائد کوروناٹیسٹ کئے جارہے ہیں،ہرمتاثرہ شخص کے ساتھ منسلک اوسط15افرادکا کوروناٹیسٹ کیاجاتاہے۔

ڈاکٹریاسمین راشد نےکہاکہ سرکاری ٹیچنگ ہسپتالوں میں لوکل پرچیزبارے تحقیقات ہرقیمت پرمکمل کی جائیں گی،سیکرٹری محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیراینڈ میڈیکل ایجوکیشن محمدعامرجان خود لوکل پرچیزکی تحقیقات کو مانیٹرکررہے ہیں،عوام کا پیسہ عوام پر خرچ کیاجائے گا،سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کی آسانی کیلئے ادویات کی مدمیں اربوں روپے بجٹ دیاجاتاہے،حکومت عوام کا پیسہ عوام پر خرچ کرنے کی ذمہ دارہوتی ہے۔

    

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -