’جعلی راجکماری کا راج ختم ، مریم قرنطینہ میں سوچیں کیا کھویا؟ کیا پایا‘

’جعلی راجکماری کا راج ختم ، مریم قرنطینہ میں سوچیں کیا کھویا؟ کیا پایا‘
’جعلی راجکماری کا راج ختم ، مریم قرنطینہ میں سوچیں کیا کھویا؟ کیا پایا‘

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ’جعلی راج کماری‘ کا راج ہر طرف سے ختم ہو رہا ہے،گلگت  بلتستان، کشمیر اور اب پی پی38 سیالکوٹ کی شکست نے انہیں کہیں منہ دکھانے کے قابل نہیں چھوڑا،جتنے دن آپ قرنطینہ میں ہیں، آپ سوچیں کہ آپ نے کیا پایا اور کیا کھویا؟ کیونکہ 15دن تخلیئے میں آپ کے لئے سوچنے کا بہترین وقت ہے۔

 میڈیاسےگفتگو کرتےہوئےڈاکٹرفردوس عاشق اعوان کا کہناتھاکہ تحریک انصاف(پی ٹی آئی) نے ن لیگ کو سیالکوٹ میں اس کے گھر میں گھس کے مارا،جنہوں نے عوام کو یرغمال بنا کر عوام کے مسائل میں اضافہ کیا اور نسل درنسل عوام پر مسلط رہے، تحریک انصاف نے اس وریو خاندان کے 40سال سے بنے سیاسی قلعے کو زمین بوس کرتے ہوئے پاش پاش کیا، پی ٹی آئی نے سیالکوٹ میں مسلم لیگ(ن) کی تینوں کلِیاں ایک ساتھ اڑا دیں۔ میں وزیراعظم عمران خان اور اپنی جماعت کی شکرگزار ہوں جنہوں نے مجھ پر اعتماد کیا اور میرے کہنے پر بریار خاندان کو ٹکٹ دیا۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کا ایک شخص کہتا تھا کہ ہم نہ جیتے تو میرا نام بدل دینا، پوری قوم پوچھ رہی ہے کہ بتاؤ کیا نام ہے تمہارا؟ کس نام سے بلائیں تمہیں؟ نام ان کا ایک ہی ہے کہ وہ ن لیگ کے مالشیئے ہیں اور وہ سیاسی یتیم ہیں جنہوں نے اب تک پارلیمنٹ کی سیڑھیاں نہیں دیکھیں۔ایک سوال کےجواب میں صوبائی معاون خصوصی نےکہا کہ نذیرچوہان اور شہزاد اکبر کی ذاتی لڑائی میں حکومت پارٹی نہیں اور نہ بننا چاہتی ہے،کسی کے خلاف فتوی دے کراسلام سے خارج کرنے کاحق کسی کو نہیں،سپیکر پنجاب اسمبلی کا ہر فیصلہ سر آنکھوں پر ہے لیکن جہاں پنجاب حکومت کا دائرہ کار نہیں وہاں ہم کچھ نہیں کر سکتے۔

 ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت محکمہ پولیس میں انقلابی تبدیلی لیکر آئی ہے،کرائم کنٹرول کے ساتھ ساتھ عوام کی سہولت پر توجہ دی جا رہی ہے،انتظامی اصلاحات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کی مدد سے عوام کو فراہم کی جانے والی خدمات میں بہتری آ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سال 2021ء کے پہلے پانچ ماہ کے دوران قتل کی وارداتوں میں نمایاں کمی واقع ہوئی اور کل 927کیس سامنے آئے جبکہ 2018 ء کے پہلے پانچ ماہ کے دوران یہ تعداد 1728تھی، اسی طرح ڈکیتی کے دوران قتل کی وارداتوں پر بھی قابو پایا گیا اور ایسے کیسوں میں 50فیصد کمی ہوئی،بچوں سے زیادتی کے کیسوں میں بھی نمایاں کمی واقع ہوئی، وزیراعظم عمران خان کے ویژن اور وزیراعلی عثمان بزدار کی قیادت میں اپریل 2021ء تک تقریباً 18.71بلین روپے کی سرکاری اراضی اور 5.72بلین روپے کی پرائیویٹ اراضی واگزار کرائی گئی،دہشتگردی کے واقعات میں نمایاں کمی آئی۔

انہوں نے کہا کہ پولیس کی استعدادکار میں اضافہ کرتے ہوئے فیزون میں 5149کانسٹیبلز بھرتی کئے گئے جبکہ فیز ٹو میں 5330کانسٹیبلز کی بھرتیوں کا عمل جاری ہے، پہلی دفعہ پولیس کانسٹیبل میرٹ پر بھرتی ہونے جا رہے ہیں،حکومت نےپولیس کے تمام ٹریننگ کورسز کے نصاب کی رویژن کر دی ہے،پی ٹی سی چوہنگ اور پی سی سہالہ میں سکول آف انویسٹی گیشن کاقیام عمل میں لایا گیا ہے،سات پولیس سٹیشنز کیلئے زمین مختص کی گئی ہے جبکہ71پولیس سٹیشنز کی تعمیر کیلئے فنڈز مہیا کئے گئے ہیں،2021-22ء کے اے ڈی پی میں 51نئے پولیس سٹیشنزکی عمارات کی تعمیرکی منظوری دی گئی ہے،ہسپتالوں میں پولیس خدمت مراکز قائم کئے گئے ہیں تاکہ زخمیوں کو تھانے کے چکر نہ لگانے پڑیں اور علاج معالجہ کو فوری یقینی بنایا جا سکے۔

اکٹرفردوس عاشق اعوان نے کہا کہ آئی ٹی کے شعبے میں مثالی اقدامات کیے گئے ہیں اور محکمہ پولیس میں سیاحت کاروں کی آسانی کے ٹورازم فیسیلٹیشن ایپ متعارف کرائی ہے،اسی طرح عوام کو سہولت فراہم کرنے کے لئے راستہ موبائل ایپ، پکار15، وومن سیفٹی ایپ، پولیس خدمت مراکز موبائل ایپ، نشہ آور کے علاج معالجے کیلئے زندگی ایپ اور عوام کیلئے پبلک ایپ متعارف کروائی ہے۔