ریلوے کے ترقیاتی منصوبوں میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی , اعظم سواتی نے بھی تیور بدل لئے 

ریلوے کے ترقیاتی منصوبوں میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی , اعظم ...
ریلوے کے ترقیاتی منصوبوں میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی , اعظم سواتی نے بھی تیور بدل لئے 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)ریلوے کے ترقیاتی منصوبوں میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی ، اگر کوئی کوتاہی ہوتی ہے تو اسکی ذمہ داری اس کےپروجیکٹ ڈائریکٹر پرہوگی ،آئندہ کسی پروجیکٹ کا ڈائریکٹر اس وقت تک تبدیل نہیں ہوگا جب تک وہ پروجیکٹ مکمل نہیں ہوگا۔

 ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر ریلوے محمد اعظم خان سواتی نے ریلوے ہیڈکواٹرزآفس لاہو ر میں جاری ترقیاتی منصوبوں کی بریفنگ کے دوران وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ ریلوے میں اچھے لوگوں کی اکثریت ہے تو ریل چل رہی ہے، ایسی ٹیم بنائیں جس سے مل کر کام کی رفتار کو تیز کیاجائے، جن لوگوں کی ایفیشنسی ٹھیک نہیں ہے، اُن کو وہاں سے تبدیل کرکے اُن کی جگہ کام کرنے والے لوگوں کو تعینات کیا جائے تاکہ ریلوے کوجدید خطوط پر آگے بڑھایا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ سگنلنگ کے جتنے پروجیکٹ ہیں انہیں چھ مہینے کے اندر اندر مکمل کیاجائے، سگنلگ سسٹم میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کیاجائے گی، ہماری غفلت کی وجہ سے گھوٹکی حادثے میں 66 قیمتی جانیں ضائع ہوگئیں اورکتناریلوے کارولنگ سٹاک اورانفراسٹرکچر کانقصان ہوا جو ناقابل تلافی ہے۔

لاہور، کراچی اور نارروال میں ملازمین کے لیے تعمیر کیے جانے والے فلیٹس کے بارے میں بتایا گیاکہ لاہور اور کراچی میں فلیٹس مکمل ہوچکے ہیں جبکہ نارروال میں فلیٹس کا کام باقی ہے جس پر وزیر ریلوے نے چھ مہینے کے اندر کام مکمل کرکے ریلوے کے حوالے سے کرنے کے احکامات جاری کیے اور یہ بقیہ کام ریلوے کی کمپنی ریل کاپ مکمل کرے گی۔

وفاقی وزیراعظم سواتی کا کہنا تھا کہ پاکستان ریلوے میں جہاں کہیں بھی مافیا ہے وہ ریلوے کی ترقی میں رکاوٹ ہے لہٰذا ہر شعبے سے مافیا کو ختم کرنا ہوگا،پاکستان ریلوے میں ہیومن ریسورس کی کمی نہیں ہے،صرف  چیزوں کو ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے، لوکوموٹیوز کے منصوبوں کو مکمل کرنے کے لیے کام میں تیزی لائی جائے ۔

کوچز کی مرمت اور بحالی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ بحالی کے پروجیکٹ کو تیز کیا جائے اور ساری کوچز کو بحال کرکے ریلوے کے سسٹم میں ڈالا جائے،اضافی کوچز بھی مختلف جگہوں پر دستیاب ہوں۔ا جلاس میں سیکرٹری /چیئرمین ریلویز حبیب الرحمان گیلانی، چیف ایگزیکٹیو آفیسر پاکستان ریلویز نثار احمد میمن، ایڈیشنل جنرل منیجر انفراسٹرکچر آصف متین زیدی، ایڈیشنل جنرل منیجر ٹریفک سید مظہر علی شاہ ایڈیشنل جنرل منیجر مکینکل سلمان صادق، ایڈوائزر ٹو فیڈرل منسٹر فار ریلویز عبدالرشید ، ڈائریکٹر پبلک ریلیشنز نازیہ جبین کے علاوہ سینئر افسران نے شرکت کی۔

بعدازاں وفاقی وزیر ریلویز نے چیف ایگزیکٹیو آفیسر پاکستان ریلویز نثار احمد میمن کے ہمراہ لاہور ڈرائی پورٹ کا دورہ کیا۔دورےکےدوران وفاقی وزیرریلویز کو ڈرائی پورٹ کی آمدن اوربرنس سکوپ سےمتعلق بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر وفاقی وزیر ریلوے محمد اعظم خان سواتی نے کہا کہ ڈرائی پورٹ پر جلد ٹرین کنٹینر بزنس شروع کیا جائے گا اور کسٹم والے لیبر ہینڈلنگ نہیں کریں گے،ڈرائی پورٹ سے مافیا کا جلد خاتمہ کردیں گے اورلاہور ڈرائی پورٹ کو ریلوے کے لئے منافع بخش بنائیں گے ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -