بزدار حکومت کا پنجاب کےبڑے صنعتی و تجارتی شہروں میں ماحول دوست بسیں چلانے کا اعلان

بزدار حکومت کا پنجاب کےبڑے صنعتی و تجارتی شہروں میں ماحول دوست بسیں چلانے کا ...
بزدار حکومت کا پنجاب کےبڑے صنعتی و تجارتی شہروں میں ماحول دوست بسیں چلانے کا اعلان
سورس: File Photo

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)فضائی آلودگی کی سنگین صورتحال کے پیش نظرپنجاب کے بڑے صنعتی و تجارتی شہروں میں ماحول دوست بسیں چلائی جائیں گی،اس ضمن میں محکمہ ٹرانسپورٹ کو رواں مالی سال کے ترقیاتی پروگرام میں شامل 200بسوں کی خریداری کی سکیم کے تحت تخمینہ شدہ 3ارب40کڑوڑ روپے کی کل رقم جاری کی جا رہی ہے،سکیم کے تحت فضائی آلودگی میں کمی کے لیے ابتدائی طور الیکٹرک ٹیکنالوجی کے تحت بیٹری سے چلنے والی بسوں کا انتخاب کیا گیا ہے جو نا صرف دھوئیں سے پاک ہوں گی بلکہ آپریشنل اخراجات میں بھی معقول ہوں گی، بعد ازاں دیگر ماحول دوست ٹیکنالوجیز سے بھی استفادہ کیا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت نے سول سیکرٹریٹ میں پنجاب میں ٹرانسپورٹ کی بہتر سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کے دوران کیا۔ اجلاس کے دیگر شرکاء میں صوبائی وزیر برائے ٹرانسپورٹ جہانزیب کھچی، مشیر وزیر اعلی برائے اقتصادی امور ڈاکٹر سلمان شاہ،سیکرٹری فنانس افتخار علی ساہو، سیکرٹری پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ عمران سکندر، سیکرٹری ٹرانسپورٹ،مینجنگ ڈائریکٹر پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی،چیف ایگزیکٹو آفیسر لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی، چیف ایگزیکٹو آفیسر اربن ڈویلپمنٹ یونٹ اور یگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔

الیکٹرک سیکرٹری ٹرانسپورٹ نے اجلاس کو بتایا چائنا، انڈیا، پورپ اور امریکہ سمیت تمام ترقی یافتہ ممالک میں 2015سے پبلک ٹرانسپورٹ کے لیے الیکٹرک بسیں استعمال کی جا رہی ہیں جبکہ ان بسوں کے بڑے مینوفریکچررز میں فرانس، جرمنی، چائنا اور امریکہ کی کمپنیاں شامل ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ الیکٹرک  وہیکل پالیسی کے تحت پاکستان میں آئندہ پانچ سال میں 1000بسوں کا ہدف مقرر کیا گیا ہے، 2030ءتک ہمیں اپنا 50فیصد ہدف مکمل کرنا ہے۔

اجلاس میں ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے الیکٹرک بس سسٹم کے لیے تین بزنس ماڈل بھی زیر بحث لائے گئے۔صوبائی وزیر برائے ٹرانسپورٹ جہانزیب کھچی نے ٹرانسپورٹ کے شعبہ میں پرائیویٹ سیکٹر کی دلچسپی کے لیے پبلک سیکٹر سے ماحول دوست ذرائع نقل و حمل پر سرمایہ کاری کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے پرائیویٹ سیکٹر کے لیے مواقع پر روشنی ڈالی۔ ڈاکٹر سلمان شاہ نے ٹرانسپورٹ سسٹم میں بہتری کے لیے کے لیے پبلک سیکٹر سے ریگولٹری سسٹم کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیرخزانہ نےسیکرٹری ٹرانسپورٹ کو ہدایت کی کہ وہ لاہورکےبعدفیصل آباداوربہاولپورکےلیےبھی ٹرانسپور ٹ ماڈل تشکیل دیں،مستقبل میں  الیکٹرک ٹرانسپورٹ کے دائرہ کار میں وسعت کو مد نظر رکھتے ہوئے ایسی کمپنیوں کے لیے مواقعے پیدا کریں جو جدید ٹیکنالوجی کے استعمال اور افادیت سے با خبر ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بسوں کی خریداری میں الیکٹرک ٹیکنالوجی کا انتخاب آلودگی سے پاک گرین اینوائرمنٹ کے فروغ کے لیے کیا جا رہا ہے، ٹرانسپورٹ کے سبسڈائز ماڈل کے ساتھ گرین فنانسنگ کو بھی استفادہ کیا جا سکتا ہے

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -