سندھ حکومت کا لاک ڈاؤن کا فیصلہ ، معروف مذہبی جماعت نے مخالفت کردی

سندھ حکومت کا لاک ڈاؤن کا فیصلہ ، معروف مذہبی جماعت نے مخالفت کردی
سندھ حکومت کا لاک ڈاؤن کا فیصلہ ، معروف مذہبی جماعت نے مخالفت کردی

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کا لاک ڈاؤن کا فیصلہ غریب عوام کیلئے شدید مشکلات کا سبب بنے گا، حکومت تاجروں ، ٹرانسپوٹرز اور مذہبی و سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے فیصلے کرے ، روزانہ کی بنیاد پر مزدوری کرکے گھر کا چولہا جلانے والا دیہاڑی دار طبقہ کہاں جائے گا؟حکومت سندھ کے فیصلے عوام کے مفاد کی بجائے غریب کو بھوک و افلاس میں دھکیل رہے ہیں، ایک دم سے پورا سندھ جام کیا جاسکتا ہے تو پھر حکومتی سطح پر ایس او پیز پر سختی سے عمل بھی کرایا جاسکتا ہے، حکومت کے سخت فیصلے کسی طور بھی تاجروں ، ٹرانسپوٹرز ، مزدوروں کے مفاد میں نہیں ہے، ٹرانسپورٹ ایس او پیز پر عمل کرواتے ہوئے چلائی جائے اور کاروبار کم از کم 8 گھٹنے کھلنے دیا جائے، حکومت مخالف نہیں مگر عوام دشمنی پالیسی بھی قبول نہیں کرینگے ، عوام کو ٹیکسوں میں چھوٹ دی جائے ،غریبوں کے لئے مراعات اور راشن دینے کا اعلان کیاجائے کورونا وباءکے خاتمے کیلئے یاسلام ُ اور استغفار ، اللہ کی بارگاہ میں کی جائے۔

مرکز اہلسنت سے جاری ایک بیان میں ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ دیہاڑی دار طبقہ مسلسل پریشانی کاشکار ہے ،حکومت کی طرف سے لاک ڈاؤن کے فیصلے تو کئے جارہے ہیں مگر غریبوں کو راشن یا کھانہ دینے کے اقدامات نہیں کئے جارہے ، لاک ڈاؤن مسئلے کا حل نہیں بلکہ عوام کو معاشی طور پر شدید مشکلات کا شکار کر دے گا، ملک پہلے ہی معاشی طور پر عدم و استحکام کا شکار ہے ، حکومت لاک ڈاؤن کے فیصلے پر نظر ثانی کرے ۔

انہوں نے کہا کہ ایس او پیز پر عمل در آمد کرایا جائے، سمارٹ لاک ڈاؤن کے پہلے بھی مثبت نتائج آئے ہیں ، کورونا وباءکے خاتمے کیلئے حکومت سندھ کے ساتھ ہیں لیکن سندھ حکومت کو بھی غریبوں اور کمزور طبقے کو سامنے رکھ کر پالیسی بنانی چاہئے عوام ایس او پیز پر مکمل عمل کریں، احتیاط پچھتاوے سے بہتر ہے، سوشل ڈسٹنس اور ماسک کا استعمال لازمی کریں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -